17 ستمبر, 2014 | 21 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

شام: بم دھماکے میں وزیرِ دفاع ہلاک

مرکزی دمشق میں پیلیس آف جسٹس کے باہر ہونے والے دھماکے کا منظر – اے ایف پی فوٹو

دمشق: شام کے دارالحکومت دمشق میں وزارتِ دفاع کے ادارے قومی سلامتی کے دفتر پر بم حملے کے نتیجے میں وزیردفاع جنرل داؤد راجہ ہلاک ہوگئے۔

بم حملے میں متعدد افراد کے ہلاک و زخمی ہونے کی بھی اطلاع ہے، تاہم اب تک ان کے تعداد کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بم سے کیے گئے حملے کے وقت عمارت کے اندر متعدد اہم سرکاری شخصیات موجود تھیں۔

قومی سلامتی ہیڈ کوارٹر پر بم حملے میں وزیردفاع جنرل داؤد راجہ شدید زخمی ہوئے۔ بعد ازاں، وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگئے۔

حملے میں ہلاک اور زخمی افراد کو ال شامی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

گزشتہ دو روز سے شہر میں حکومت مخالفوں اور سرکاری سیکورٹی فورسز کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں۔

سرکاری فورسز نے دعویٰ کیا ہے کہ شہر پر ان کا کنٹرول برقرار ہے۔دوسری طرف، حکومت مخالف مظاہرین اور گروپوں نے شہر کی گلیوں میں مورچے قائم کرلیے ہیں۔

اس حصے سے مزید

نائجیریا میں چرچ منہدم، 40 افراد ہلاک

نائجیریا میں ایک چرچ کے منہدم ہونے کے نتیجے میں کم از کم 40 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے۔

صومالیہ: الشباب کے جنگجوئوں کیلئے معافی کا اعلان

حکومتی اعلان کا مقصد انتشار ختم کرنا ہے،45روز میں جو جنگجو عسکریت پسندی ترک کردیں گے ان کو معاشرے کا حصہ بنایا جائے گا.

بوکو حرام کا اسلامی ریاست کا اعلان

بوکو حرام کے رہنما ابوبکر شیکاؤ نے ایک وڈیو میں اسلامی ریاست کے قیام کا اعلان کیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ڈیم، کینال، بیراج، اور ماحول

ہندوستانی پنجاب میں زیادہ بارشیں ہوئیں، جسکی وجہ سے اپ سٹریم کا پانی پاکستانی چناب اور جہلم میں بہہ آیا ہے

انتخابی اصلاحات: اگلا قدم

بحیثیت قوم ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا، کہ اس معاملے میں سچ سب کے سامنے آئے، اور کوئی شک شبہہ باقی نا رہے۔

بلاگ

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔