31 اگست, 2014 | 4 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان میں خود کش حملے، بم دھماکے میں بارہ ہلاک

 ۔ فائل تصویر رائٹرز

پشاور: کرم ایجنسی اور دیر بالا میں خود کش دھماکہ اور بم پھٹنے کے دو علیحدہ علیحدہ واقعات میں بارہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق کرم ایجنسی میں سپن ٹل کے علاقے میں واقع طالبان منحرف ملا نبی حنفی کے مرکزپر خودکش حملہ کیا گیا، جس کے نتیجے میں نو افراد ہلاک ہوگئے۔ ہلاک ہونے والوں میں تین بچیاں اور ایک بچہ بھی شامل ہے۔

حملے میں سترہ زخمی افراد کو ہسپتال پہنچا دیا گیا ہے۔

بی بی سی کے مطابق یہ خودکش کار حملہ تھا، تاہم ایک خبررساں ادارے کی اطلاع کے مطابق مقامی، سرکاری اور انٹیلی جنس ذرائع کا کہنا ہے کہ خود کش حملہ آور پیدل چلتا ہوا مرکز میں داخل ہوا اور خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

سرکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والوں میں پانچ بچے اور ملاح نبی حنفی کے گروپ سے تعلق رکھنے والے چار عسکریت پسند بھی شامل ہیں۔

ہنگو سے تعلق رکھنے والے ملانبی حنفی کالعدم تحریک طالبان کا حصہ تھے، تاہم اختلافات کے باعث انہوں نے علیحدگی اختیار کرکے اپنا گروپ قائم کرلیا تھا۔

حملے کے وقت ملا نبی مرکز میں موجود نہیں تھے۔ اطلاعات کے مطابق وہ محفوظ ہیں۔

اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ ماضی میں کئی بارملا نبی اور کالعدم تحریکِ طالبان کے کمانڈر ملاطوفان کے گروپوں میں خونی جھڑپیں ہوچکی تھیں۔ جس میں دونوں طرف سے کئی عسکریت پسند ہلاک اور زخمی ہوئے تھے ۔

حملے کی ذمہ داری تاحال کسی نے قبول نہیں کی۔ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ حملہ کالعدم تحریک طالبان کی جانب سے کیا گیا ہے۔

دریں اثنا، مالا کنڈ ایجنسی  کے علاقے دیر بالا میں سڑک کنارے نصب بم پھٹنے سے  مسافر گاڑی میں سوار تین افراد ہلاک ہوگئے۔

مقامی پولیس افسر ظاہر شاہ نے بتایا کہ دھماکے میں سات افراد زخمی بھی ہوئے، جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

حملے کی ذمہ داری فوری طور پر کسی نے قبول نہیں کی۔

ڈان نیوز کے مطابق واقعے کے بعد پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے کر دہشت گردوں کی تلاش شروع کردی ہے۔

اس حصے سے مزید

۔’’ضرب عضب‘‘: 32 دہشت گرد ہلاک، 3ٹھکانے تباہ

آئی ایس پی آر کے مطابق بارودی مواد سے بھری ہوئی 23 گاڑیاں اور اسلحے کے 4 ذخائر بھی تباہ کر دیئے گئے ہیں۔

کوہاٹ : ایک ہی خاندان کے 5 افراد قتل

نامعلوم افراد نے ایک گھر میں گھس کر فائرنگ کی، جس کے نتیجے میں میاں، بیوی، دو بیٹیاں اور ایک بیٹا ہلاک ہوگیا۔

بے گھر افراد میتوں کی تدفین کے لیے پریشان

مقامی لوگ اپنے قبرستانوں میں ان کی میتوں کی تدفین کی، جبکہ انتظامیہ شمالی وزیرستان لے جانے کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ملکی مسائل سے غیر آہنگ حکومتی پالیسیاں

کیا یہ بات سمجھ آنے والی نہیں کہ میگا پروجیکٹس پر اٹھنے والے پیسے سے پہلے توانائی کے مسئلے کو حل کر لیا جائے؟

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

بلاگ

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

‫ڈرامہ ریویو: وہ۔۔۔ دوبارہ (خوف و دہشت کا احساس)

انسان چاہے بد روحوں سے جتنا بھی ڈرے مگر ان پر بنی فلموں یا ڈراموں کو دیکھنے کا شوق پھر بھی اس کا پیچھا نہیں چھوڑتا۔

تھری ڈی پرنٹنگ پر کچھ سوالات

کچھ کیسز ضرور ہوں گے جن میں تھری ڈی پرنٹنگ کو کاپی رائیٹ مواد کی غیر قانونی نقل تیار کرنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

پانی کی کمی اور پاکستان کا مستقبل

وزرات منصوبہ بندی کے مطابق پاکستان کی پانی ذخیرہ کی صلاحیت صرف نو فیصد ہے جبکہ دنیا بھر میں یہ شرح چالیس فیصد ہے۔