17 اپريل, 2014 | 16 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

شفاف انتخابات آخری خواہش ہے، فخرالدین جی ابراہیم

نئے چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم ۔–فائل فوٹو

اسلام آباد: چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) فخرالدین جی ابراہیم نے شفاف انتخابات کو اپنی آخری خواہش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے احکامات کی تعمیل کریں گے۔

فخرالدین جی ابراہیم نے آج (پیر) بطور تئیسویں چیف الیکشن کمشنر حلف اٹھا لیا۔

سپریم کورٹ میں ایک تقریب کے دوران چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ان سے حلف لیا۔

تقریب میں سپریم کورٹ کے جج، سیکرٹری الیکشن کمیشن، الیکشن کمیشن ارکان اور وکلاء کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

تقریب کے اختتام پر میڈیا سے گفتگو میں فخرالدین جی ابراہیم نے کہا کہ عام انتخابات کرانے کا اعلان وزیراعظم کا اختیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کے پیشرو کہہ چکے ہیں کہ الیکشن کمیشن انتخابات کیلئے تیار ہے۔

فخرالدین جی ابراہیم حلف برداری کے بعد الیکشن کمیشن کے دفتر پہنچے اور اپنے عہدے کا چارج سنبھال لیا۔

اس حصے سے مزید

وزیراعظم کی زیرِ صدارت قومی سلامتی کا اجلاس جاری

ذرائع کے مطابق اس اجلاس میں حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکراتی عمل میں پیش رفت پر بھی غور کیا جائے گا۔

سینیٹر فیصل رضا عابدی سے استعفیٰ طلب

پارٹی ڈسپلن کی بار بار خلاف ورزی پر پی پی پی نے فیصل رضا عابدی سے سینیٹر شپ کا استعفی طلب کرلیا ہے۔

وزیراعظم کی زرداری کو پی پی او میں ترمیم کی یقین دہانی

نواز شریف اور آصف علی زرداری کے درمیان ملاقات میں ملکی سلامتی اور دیگر معاملات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔

ٹی ٹی پی نہیں تو پھر مذاکرات کیوں؟

عام آدمی کو صرف تحفظ چاہئے اور اگر مذاکرات یہ نہیں دے رہے تو ان کو مزید آگے بڑھانے سے کیا حاصل؟