01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

شفاف انتخابات آخری خواہش ہے، فخرالدین جی ابراہیم

نئے چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم ۔–فائل فوٹو

اسلام آباد: چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) فخرالدین جی ابراہیم نے شفاف انتخابات کو اپنی آخری خواہش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے احکامات کی تعمیل کریں گے۔

فخرالدین جی ابراہیم نے آج (پیر) بطور تئیسویں چیف الیکشن کمشنر حلف اٹھا لیا۔

سپریم کورٹ میں ایک تقریب کے دوران چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ان سے حلف لیا۔

تقریب میں سپریم کورٹ کے جج، سیکرٹری الیکشن کمیشن، الیکشن کمیشن ارکان اور وکلاء کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

تقریب کے اختتام پر میڈیا سے گفتگو میں فخرالدین جی ابراہیم نے کہا کہ عام انتخابات کرانے کا اعلان وزیراعظم کا اختیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کے پیشرو کہہ چکے ہیں کہ الیکشن کمیشن انتخابات کیلئے تیار ہے۔

فخرالدین جی ابراہیم حلف برداری کے بعد الیکشن کمیشن کے دفتر پہنچے اور اپنے عہدے کا چارج سنبھال لیا۔

اس حصے سے مزید

عیدالاضحیٰ پر تین روزہ تعطیلات کا اعلان

وزراتِ داخلہ کے مطابق چھ سے آٹھ اکتوبر تک تعطیلات کے دوران تمام سرکاری اور غیر سرکاری ادارے اور دفاتر بند رہیں گے۔

'ڈنڈنے کے زور پر مڈٹرم انتخابات کی حمایت نہیں کی جاسکتی'

اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا پی ٹی آئی کی جانب سے چار حلقے کھولنے کے مطابات پر بروقت عمدرآمد ہونا چاہیے تھا۔

آخر کیا پایا؟ 'انقلاب' کی خواہش لیے دھرنے والوں کی واپسی

پی اے ٹی کے کارکنان دھرنے سے گھر واپسی پر جہاں خوش ہیں، وہیں یہ بھی سوچ رہے ہیں کہ آخر انہوں نے کیا حاصل کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔