15 ستمبر, 2014 | 19 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ارسلان افتخار کی نیب سے معذرت

ارسلان افتخار۔ فائل فوٹو

اسلام آباد: نیب نے ارسلان افتخار کیس میں رجسٹرار سپریم کورٹ ڈاکٹر فقیر حسین کو پچیس جولائی جبکہ چیف جسٹس کے بیٹے ارسلان افتخار کو چھبیس جولائی کو پھر طلب کرلیا ہے۔

ارسلان افتخار، ملک ریاض کے داماد سلمان احمد اور ان کے بزنس پارٹنر احمد خلیل نے نیب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہونے سے معذرت کرلی تھی۔

نیب نے ارسلان افتخار چوہدری، سلمان احمد اور احمد خلیل کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیے آج نیب ہیڈکوارٹر میں طلب کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق نیب تحقیقاتی ٹیم پر تحفظات کے باعث ارسلان افتخار ٹیم کے سامنے پیش نہیں ہونا چاہتے۔

جبکہ سلمان احمد اور احمد خلیل نے بھی نیب کی تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہونے سے معذرت کر لی ہے۔

ملک ریاض کے داماد نے نیب کو اگاہ کیا ہے کہ ان کو دھمکیاں مل رہی ہے وہ اس کیس کے لئے پاکستان نہں اسکتے تاہم ان کا بیان بیرون ملک ریکارڈ کرایا جاسکتا ہے۔

اس کے علاوہ احمد خلیل نے بھی نیب کو پغام بھجوایا ہے کہ وہ جرمنی میں زیر علاج ہے لحاضہ پیش نہیں ہوسکتے۔

دوسری جانب، ارسلان افتخار کیس میں بحریہ ٹاؤن کے سابق چیرمین ملک ریاض نیب تحقیقاتی ٹیم کے روبرو اپنا بیان ریکارڈ کرا چکے ہیں۔

اس حصے سے مزید

آئی ایم بی اجلاس: کیا پاکستان پر سفری پابندیاں برقرار رہیں گی؟

اس ضمن میں پولیو پروگرام کی نیشنل کوآرڈینیٹر عائشہ رضا کا کہنا ہے کہ وہ لندن کے اجلاس میں پاکستان کا دفاع کریں گی۔

سیلاب سے بدترین تباہی، چیئرمین فلڈ کمیشن دیگر کاموں میں مصروف

حکومت نے فیڈرل فلڈ کمیشن کے چیئرمین اسجد امتیاز علی کو پانچ اہم لیکن متنوع ذمہ داریاں تفویض کر رکھی ہیں۔

راولپنڈی: سیکیورٹی فورسز کی گاڑی الٹنے سے 13 افراد زخمی

اطلاع ملتے ہی ریسکیو کی امدادی ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ گئیں اور زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

باغیوں کی ضرورت ہے

موجودہ حکومت انتہائی قابل سول سرونٹس کو بھی صرف اس لیے ناپسند کرتی ہے، کیونکہ وہ درباریوں کی طرح نیازمندی نہیں دکھاتے۔

چھوٹے باغیچوں کی اہمیت

غریب خواتین کو لیز پر چھوٹے پلاٹ دیے جاسکتے ہیں، جہاں وہ اپنے گھر والوں کے لیے کھانے کی چیزیں اگا سکیں۔

بلاگ

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔

ماضی کی جھلکیاں، میرانِ تالپورکے مقبرے

یہ دیکھ کر بہت افسوس ہوتا ہے کہ مزارات کافی خراب حالت میں ہیں۔ یہ بھی نہیں کہا جا سکتا کہ کس وقت دیواریں منہدم ہوجائیں۔

ٹیم کو محمد حفیظ کی ضرورت ہے

ٹی-20 اور ون ڈے، دوںوں ہی میں وہ سب سے اچھے آل راؤنڈر ہیں، اور یہاں وہ پاکستان کے لیے اپنی خدمات انجام دے سکتے ہیں۔