18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

خواجہ شریف قتل سازش کیس کا مقدمہ درج

ایف آئی اے لوگو۔ – فائل فوٹو

اسلام آباد: وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے نے خواجہ شریف قتل سازش کیس کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔ مقدمہ میں وزیراعلیٰ پنجاب کے سیکرٹری ڈاکٹر توقیر شاہ کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

منگل کے روز وفاقی حکومت کی جانب سے ایف آئی اے نے سابق چیف جسٹس خواجہ شریف قتل سازش کیس کا مقدمہ درج کرا دیا گیا۔ ایف آئی اے کے سیکشن آفیسر حاکم دین کی جانب سے ایف آئی آر درج کرائی گئی۔

ایف آئی آر  دفعہ تین سو دو سمیت دیگر دفعات کے تحت درج کی گئی ہے جس میں وزیراعلی پنجاب کے سیکرٹری توقیر شاہ، ڈی جی سول ڈیفنس پنجاب احسن الرحمان، ڈائریکٹر اسپیشل برانچ پنجاب شاہد محمود اور ن لیگ کے کارکن سمیت دیگر افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔

نامزد افراد پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے وفاق،صوبائی حکومت اور عدلیہ کے درمیان محاذ آرائی پیدا کرنے کے لیے من گھڑت خبریں پھیلائیں۔ وفاقی حکومت نے قتل سازش کی تحقیقات کے لیے جوڈیشل کمیشن بھی تشکیل دیا تھا۔

اس حصے سے مزید

جامعہ کراچی: شعبہ اسلامک اسٹڈیز کے سربراہ فائرنگ سے ہلاک

ڈاکٹر شکیل اوج کی گاڑی کو گلشن اقبال میں نامعلوم افراد نے نشانہ بنایا، جامعہ کراچی تین دن کے لیے بند رکھنے کا اعلان۔

غیر قانونی سمز ایکٹیویٹ کرنے پر ایک شخص کو چھ سال قید کی سزا

ملزم نورالحق پر الزام تھا کہ وہ جعلی شناختی کارڈ کے ذریعے غیر قانونی سمیں ایکٹیویٹ کرتے ہیں۔

ڈاکٹر عطاء الرحمٰن کے لیے چین کا سب سے بڑا قومی ایوارڈ

تعلیم کے شعبے میں دونوں ممالک کے مابین تعلقات کو مضبوط بنانے کے حوالے سے ان کی خدمات کے اعتراف میں یہ ایوارڈ دیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔