01 ستمبر, 2014 | 5 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

موسیٰ گیلانی اورمخدوم شہاب کی عبوری ضمانت میں توسیع

علی موسیٰ گیلانی ۔ فائل تصویر آن لائن

لاہور ہائیکورٹ کی راولپنڈی بینچ نے ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں رکن قومی اسمبلی علی موسٰی گیلانی اورسابق وفاقی وزیر صحت مخدوم شہاب الدین کی عبوری ضمانت میں چھ اگست تک توسیع کردی ہے۔

سماعت کے دوران  اے این ایف کے تحقیقاتی افسر نے عدالت کو بتایا کہ علی موسٰی گیلانی، مخدوم شہاب الدین تحقیقات میں تعاون نہیں کر رہے،جس پر جسٹس شیخ نجم الحسن نے تنبیہہ اگر دونوں نے تحقیقات میں تعاون نہ کیا تو ان کی ضمانت خارج کردی جائے گی۔

بعد میں عدالت نے علی موسٰی گیلانی  اور مخدوم شہاب الدین کی ضمانت میں چھ اگست تک توسیع دیدی۔ جبکہ سابق ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر رشید جمعہ اور فارما کمپنی کے سابق ڈائریکٹر رضوان احمد نے ضمانت کی درخواستیں واپس لے لیں۔

عدالت کے استفسار پر اے این ایف حکام نے بتایا کہ ان کے وعدہ معاف گواہ بننے کے بعد ان کی ضمانت کی ضرورت نہیں رہی۔

کیس کی سماعت جسٹس شیخ نجم الحسن اور جسٹس شہزاد احمد گھیبہ پر مشتمل ڈویژنل بینچ کررہی ہے۔

اس حصے سے مزید

عمران خان منصوبندی کرکے اسلام آباد آئے، ہاشمی

جاوید ہاشمی نے انکشاف کیا کہ عمران خان نے کہا تھا کہ معاملات طے ہو گئے ہیں اور ستمبر میں الیکشن ہوں گے۔

وزیر اعظم اور آرمی چیف کی ملاقات ختم

وزیر اعظم نواز شریف اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے درمیان آج ہونے والی ملاقات ختم ہو گئی ہے۔

عمران، قادری کیخلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج

دونوں رہنماؤں کے خلاف ایس ایچ او محبوب احمد کی مدعیت میں سیکریٹریٹ پولیس تھانےمیں ایف آئی آر نمبر 182 31/8 درج کی گئی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

احتیاطی نظربندی کا غلط قانون

فوجی اور سویلین حکومتوں نے باقاعدگی سے احتیاطی نظربندی کو اپنے مخالفین کو خاموش کرنے اوردھمکانے کے لیے استعمال کیا ہے۔

توجہ طلب شعبہ

بجلی کی لائنیں لگانے اور مرمت کرنے کو دنیا کے دس خطرناک ترین پیشوں میں شمار کیا جاتا ہے-

بلاگ

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔

تاریخ کی تکرار

پولیس پر تشدد اور دہشت گردی کا الزام لگانے والے کیا اپنے گھروں پر کسی ایرے غیرے نتھو خیرے کو چڑھائی کی اجازت دیں گے؟

آبی مسائل کا ذمہ دار ہندوستان یا خود پاکستان؟

پاکستان میں پانی اور بجلی کے بحران کی وجہ پچھلے 5 عشروں سے پانی کے وسائل کی خراب مینیجمنٹ ہے۔

نوازشریف: قوت فیصلہ سے محروم

نواز شریف اپنے بادشاہی رویے کی وجہ سے پھنس چکے ہیں، جو فیصلے انہیں چھ ماہ پہلے کرنے چاہیے تھے وہ آج کر رہے ہیں۔