23 ستمبر, 2014 | 27 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

موسیٰ گیلانی اورمخدوم شہاب کی عبوری ضمانت میں توسیع

علی موسیٰ گیلانی ۔ فائل تصویر آن لائن

لاہور ہائیکورٹ کی راولپنڈی بینچ نے ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں رکن قومی اسمبلی علی موسٰی گیلانی اورسابق وفاقی وزیر صحت مخدوم شہاب الدین کی عبوری ضمانت میں چھ اگست تک توسیع کردی ہے۔

سماعت کے دوران  اے این ایف کے تحقیقاتی افسر نے عدالت کو بتایا کہ علی موسٰی گیلانی، مخدوم شہاب الدین تحقیقات میں تعاون نہیں کر رہے،جس پر جسٹس شیخ نجم الحسن نے تنبیہہ اگر دونوں نے تحقیقات میں تعاون نہ کیا تو ان کی ضمانت خارج کردی جائے گی۔

بعد میں عدالت نے علی موسٰی گیلانی  اور مخدوم شہاب الدین کی ضمانت میں چھ اگست تک توسیع دیدی۔ جبکہ سابق ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر رشید جمعہ اور فارما کمپنی کے سابق ڈائریکٹر رضوان احمد نے ضمانت کی درخواستیں واپس لے لیں۔

عدالت کے استفسار پر اے این ایف حکام نے بتایا کہ ان کے وعدہ معاف گواہ بننے کے بعد ان کی ضمانت کی ضرورت نہیں رہی۔

کیس کی سماعت جسٹس شیخ نجم الحسن اور جسٹس شہزاد احمد گھیبہ پر مشتمل ڈویژنل بینچ کررہی ہے۔

اس حصے سے مزید

پاکستانی طالبان نے پشاور حملے کی ذمہ داری قبول کرلی

حملے میں ایف سی کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا، ہلاک ہونے والوں کی تعداد چار ہوگئی۔

عمران خان استعفی کی تصدیق کیلئے 13اکتوبر کو طلب

اسپیکرقومی اسمبلی نے تحریک انصاف کے ارکان کو 25ستمبر سےطلب کرنے کااعلان کیا ہےجبکہ 31ارکان کو 3گروپس میں بلایا جائے گا

امریکا افغانستان میں امن نہیں چاہتا، کرزئی

افغانستان کے سبکدوش ہونے والے صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ امریکا اپنے مفادات کی وجہ سے افغانستان میں جنگ چاہتا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

سوشلزم کیوں؟

اگر ہم مسلسل بحث کرسکتے ہیں کہ جمہوریت کیوں نہیں، شریعت کیوں نہیں، تو اس سوال پر بھی بحث ضروری ہے کہ سوشلزم کیوں نہیں؟

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

بلاگ

مووی ریویو: 'خوبصورت' - فواد اور سونم کی خوبصورت کہانی

اپنے پُر مزاح کرداروں کے باوجود فلم شوخ اور رومانٹک ڈرامہ ہے، جسے آپ باآسانی ڈزنی کی طلسماتی کہانی کہہ سکتے ہیں-

کراچی میں بجلی کا مسئلہ اور نیپرا کا منفی کردار

اپنی نااہلی کی وجہ سے نیپرا نے بیرونی سرمایہ کاروں کو مشکل میں ڈال رکھا ہے، جن میں سے کچھ تو کام شروع کرنے کو تیار ہیں۔

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔