22 اگست, 2014 | 25 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

صومالی قزاقوں سے رہائی، سات پاکستانی کراچی پہنچ گئے

صومالی قزاقوں کے ہاتھوں یرغمال بنائے گئے پاکستانی محمد مجتبیٰ کراچی ایئرپورٹ پر اپنی بیٹیوں کے ہمراہ ۔ اے پی تصویر

کراچی: تاوان کی ادائیگی کے بعد صومالی قزاقوں کی قید سے رہائی پانے والے سات پاکستانی کراچی پہنچ گئے، جن کا کراچی ائیر پورٹ پر شاندار استقبال کیا گیا۔

جمعرات کے روز سات پاکستانیوں کے کراچی ایئرپورٹ پہنچنے پر وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ، گورنرسندھ ڈاکٹرعشرت العباد اورمتاثرہ اہلخانہ نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر رقت آمیز مناظر بھی دیکھنے میں آئے اور رہائی پانے والے افراد نے وطن واپس پہنچنے پر خوشی کا اظہار بھی کیا۔

ایم وی ایلبیڈو نامی بحری جہاز کے عملے کو تقریباً ایک سال نو ماہ پہلے صومالی قزاقوں نے یرغمال بنایا تھا۔

گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد نے گزشتہ روز ذرائع ابلاغ کے نمائیندوں کو بتایا تھا کہ تمام پاکستانی یرغمال صومالی قزاقوں کی قید سے رہائی کے بعد اب محفوظ مقام پر ہیں اور وہ اگلے چوبیس گھنٹوں میں پاکستان آجائیں گے۔ اس خبر کے بعد یرغمال پاکستانیوں کے اہلِ خانہ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی تھی۔

ان پاکستانیوں کوچھبیس نومبر دوہزار دس میں صومالی ساحل سے نو سو ناٹیکل میل کے فاصلے پرگرفتار کرکے  یرغمال بنایا گیاتھا۔

رہائی پانے والے افراد اور ان کے اہلخانہ کو گورنر ہاؤس  بھی لیجایا گیا جہاں گورنر اور وزیراعلیٰ سندھ، وزراء اور سیاسی شخصیات موجود تھیں۔ اس موقع پر رہائی پانے والے افراد کے اہلخانہ کی خوشی دیدنی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ عید سے پہلے ان کی عید ہو گئی۔

رہائی پانے والے افراد نے اپنی رہائی کے لیے کی جانے والی کوششوں پر حکومت اور دیگر شخصیات کی کوششوں کو سراہتے ہوئے ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔

اس حصے سے مزید

حکومت سخت رویے سے گریز کرے، الطاف حسین

ایم کیو ایم کے قائد نے پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ملکی مفاد کی خاطر معاملے کو ٹھنڈا کردیں۔

کراچی اسٹاک ایکسچینج: مندی کے رجحان میں کمی

جمعرات کو کے ایس ای ہنڈریڈ انڈیکس 400 پوائنٹس کے اضافے کے ساتھ 29 ہزار کی سطح عبور کرگیا ہے۔

'ریڈ زون سے ٹی وی کیمرے ہٹادیں، انقلاب ختم ہوجائے گا'

یہ بات ماہرِ سیاسیات و اقتصادیات ڈاکٹر اکبر زیدی نے پاکستان میں سماجی تبدیلیوں کے موضوع پر اپنے لیکچر کے دوران کہی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کچھ جوابات

وزیر اعظم کا اعلان کردہ کمیشن مسئلے سلجھانے کے بجائے زیادہ الجھا دے گا۔

بڑھتی مایوسی

مایوسی تب اور بڑھتی ہے جب عوام دیکھتے ہیں کہ حکمران عوامی پیسے سے اپنے کام چلانے میں شرم بھی محسوس نہیں کرتے۔

بلاگ

پاکستان ایک "ساس" کی نظر سے

68 سالہ جین والر کو پاکستان بہت پسند آیا، اتنا زیادہ کہ بقول ان کے مجھے پاکستان سے محبت ہوگئی ہے۔

مووی ریویو: گارڈینز آف گیلیکسی ایک ویژول ٹریٹ ہے

جو یادوں کے ایسے دور میں لے جاتی ہے جب ایکشن کے بجائے مزاح کسی کامک کا سرمایہ اور اسے بیان کرنے کا ذریعہ ہوا کرتا تھا۔

اب مارشل لاء کیوں ناممکن؟

ایوب، ضیاء اور مشرّف، تینوں ہی مغربی قوّتوں کے جغرافیائی سیاسی کھیلوں میں اسٹریٹجک کردار کے بدلے جیتے تھے۔

عمران خان کے نام کھلا خط

گزشتہ ایک ہفتے کے واقعات پی ٹی آئی ورکرز کی تمام امیدوں اور توقعات کو بچکانہ، سادہ لوح اور غلط ثابت کر رہے ہیں۔