03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پارلیمان کے اختیارات کو مقدم رکھا جائیگا: حکومتی اتحاد

ایوان صدر میں حکومتی اتحدیوں کا اجلاس۔ – آئی این پی فوٹو

اسلام آباد: اتحادی جماعتوں کے ایک اہم اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پارلیمان کے قنون سازی کے حق پر کسی بھی صورت میں سمجھوتا نہیں کیا جائے گا اور اسکے اختیار کو مقدم رکھا جائے گا۔

جمعہ کے روز ترجمان ایوان صدر فرحت اللہ بابر نے بتایا کہ صدر آصف علی زرداری کی زیر صدارت اتحادی جماعتوں کے رہنماوں کی اجلاس کے دوران سپریم کورٹ میں توہین عدالت قانون کو کالعدم قرار دئیے جانے کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ آئین نے قانون سازی کا اختیار صرف منتخب نمائندوں کو دیا ہے اور اس حق پر کسی قیمت پر سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔ پارلیمان کے قانون سازی کے اختیار کو ہرحال میں مقدم رکھا جائے گا۔

اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ کراچی میں قانون شکن عناصر سے بلا تفریق نمٹا جائے اور شہرمیں موجود بھتہ خوروں اور جرائم پیشہ عناصر سے سختی سے نمٹا جائے۔

 کراچی کے تاجروں اور صنعت کاروں کو درپیش کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی اقدامات کا فیصلہ بھی کیا گیا۔

وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے اجلاس کو بجل کی صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی۔ اس موقع پر انہوں  نے اجلاس کو بتا یا کہ بجلی کی صورتحال بتدریج بہتر ہورہی یے اور بجلی بحران پر جلد قابو پالیا جائے گا۔

اجلاس میں صدر نے ملک کے مختلف علاقوں میں چھوٹے ڈیمز کی تعمیر کے منصوبوں کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کرنے ہدایت کی ترجمان ایوان صدر فرحت اللہ بابر  کے مطابق صدر نے سولر پینل پر ڈیوٹی کی شرح صفر کرنے اور  منڈا ڈیم کی تعمیر میں رکاوٹیں فوری طور  پر دور کرنے کی ہدایت بھی کی۔

اجلاس میں مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین، ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار اور اے این پی کے رہنما حاجی عدیل سمیت کئی دوسرے نامور رہنما بھی شریک ہوئے۔

اس حصے سے مزید

مناسب خوراک کی کمی اور تھکاوٹ انقلابیوں پر اثرانداز ہونے لگی

یہ بدقسمتی ہے کہ یہ احتجاجی مظاہرین اس طرح کے مضر صحت ماحول میں رہنے پر مجبور ہیں۔

برطانیہ کا شہریوں کو پاکستان کے سفر پر انتباہ

سفارت کار، سرکاری وفود اور شہریپاکستان کے اپنے سفر پر نظرثانی کریں، دفتر خارجہ و کامن ویلتھ۔

آصف زرداری ملکی سیاسی بحران کے حل میں کردار ادا کرنے کے خواہشمند

آصف علی زرداری نے وفاقی دارالحکومت میں قیام کرکے صورتحال کو حل کرنے کے لیے کردار ادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔