21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

ایم کیو ایم کی تحریک انصاف کو اے پی سی میں شرکت کی دعوت

ایم کیوایم کے رہنما، فاروق ستار۔ فائل فوٹو اے ایف پی

لاہور: متحدہ قومی موومنٹ نے پاکستان تحریک انصاف کو آل پارتیز کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی ہے تاہم پی ٹی آئی کے رہنمائوں کا کہنا ہے کہ وہ کوئی بھی فیصلہ اپنی پارٹی کی اعلیٰ قیادت سے مشورے کے بعد کریں گے۔

منگل کے روز متحدہ قومی موومنٹ کے وفد نے پارٹی کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار کی قیادت میں تحریک انصاف کے صدر جاوید ہاشمی اور وائس چیرمین شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی۔

ایم کیو ایم کے ڈپٹی کنوینر کا کہنا تھا کہ ملک کو داخلی اور خارجی خطرات کا سامنا ہے۔ تحریک انصاف نے ڈاکٹر فاروق ستار کے موقف کی تائید کرتے ہوئے قومی امور پر سیاسی جماعتوں کے اتفاق رائے پر زور دیا۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں سے روابط کا مقصد مجوزہ گول میز کانفرنس کے لیے تمام  جماعتوں کو یکجا کر کے مسائل  کا حل ڈھونڈنا ہے۔

تحریک انصاف کے صدر جاوید ہاشمی نے کہا کہ ملک پر خوف کا سایہ ہے۔ تحریک انصاف الیکشن  تنہا ہی لڑے گی لیکن ملکی بحرانوں سے نجات کے لیے سیاسی جماعتوں سے گفتگو کرنے کے لیے تیار ہیں۔

تحریک انصاف کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ وہ ایم کیو ایم کا موقف پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے سامنے رکھیں گے۔

اس موقع پر ایم کیو ایم کے وفد نے عمران خان اور تحریک انصاف کے وفد کو نائن زیرہ کا دورہ کرنے کی دعوت بھی دی۔

اس حصے سے مزید

مریض کے بجائے مرض کا علاج کریں، نواز شریف

وزیرِ اعظم نے دورہ کراچی میں شہر میں بد امنی پر ناراضگی کا اظہار کیا۔

خیبر پختونخوا کے تمام تھانوں میں 'خواتین ڈیسک'

ڈیسک تشکیل دینے کا مقصد خواتین کو سہولت فراہم کرنا ہے، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک۔

سینیٹ کمیٹی یوٹیوب پابندی کے خلاف

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق نے یوٹیوب پر پابندی کے خلاف ایک قرارداد کو منظور کرلیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

'اقبال اور 'تصور اقبال

اقبال کا سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ جس کسی نے کلام اقبال سے جو نکالنا چاہا، اسے مل گیا

نریندر مودی اور نواز شریف ساتھ ساتھ

اگر بی جے پی حکومت بنانے میں کامیاب ہوتی ہے تو 1998 کی طرح آج بھی پاکستان میں نواز شریف کی ہی حکومت ہوگی۔

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-