19 اپريل, 2014 | 18 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

ملک ریاض پر فرد جرم عائد

سپریم کورٹ کی عمارت کا ایک منظر۔۔—اے ایف پی تصویر

اسلام آباد: بحریہ ٹاؤن کے سابق چیرمین ملک ریاض کے خلاف توہین عدالت کیس میں فرد جرم عائد کردی گئی۔ البتہ اٹارنی جنرل نے فرد جرم عائد کرنے پر اعتراض کردیا ہے۔

اس کے علاوہ ملک ریاض نے بھی صحت جرم سے انکار کیا ہے۔

ملک ریاض پر یہ فرد ایک پریس کانفرنس میں عدلیہ پر الزامات لگانے پر عائد کی گئی ہے۔ کیس کی مزید سماعت انتیس اگست کو ہوگی۔

سپریم کورٹ میں ملک ریاض نے  انٹرا کورٹ اپیل دائر کردی۔

میاں جسٹس شاکراللہ جان کی سربراہی میں عدالت عظمی کے تین رکنی بنچ ملک ریاض کے خلاف تو  ہین عدالت کیس کی سماعت کر رہا ہے۔

سماعت کے دوران ڈاکٹر عبدالباسط نے عدالت کو کہا کہ انٹرا کورٹ اپیل پر فیصلے تک توہین عدالت کی کاراوئی روک دی جائے۔

اس پر بنچ  میں موجود جسٹس اعجاز افضل کا کہان تھا کہ نیا قانون اب ختم ہوگیا ہے اور موجودہ قانون میں کاوائی جاری رکھی جاسکتی ہے۔

جسٹس اعجاز افضل نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ توہین عدالت ایکٹ دوہزار بارہ کو ایسا تصور کیا جائے جیسا کہ وہ تھا ہی نہیں۔

ڈاکٹر باسط کا کہنا تھا کہ جس دن انٹرا کورٹ اپیل دائر ہوئی اس دن توہین عدالت کا نیا قانون لاگو تھا۔

انھوں نے کہا کہ اپیل  کے آتے ہی شوکاز نوٹس اور توہین عدالت کی کاروائی معطل ہوگئی تھی۔

ڈاکٹر باسط نے عدالت سے استدعا کی کہ عید کے بعد تک کیس کی سماعت ملتوی کیا جائے۔

اس پر جسٹس جواد ایس خواجہ نے کہا کہ پہلے فرد جرم عائد کرینگے اور اس کے بعد سماعت بھی ملتوی کرینگے۔

جسٹس اعجاز افضل نے کہا کہ کیا قباحت  ہے کہ اگر آج فرد جرم عائد کی جائے۔

ڈاکٹر باسط نے کہا اس سے میرا انٹرا کورٹ کا حق متاثر ہو جائے  گا۔

اس پر جسٹس جواد اس خواجہ نے کہا کہ آپ  کے انٹرا کورٹ کی اپیل کی سماعت چلتی رہے گی۔

اس حصے سے مزید

پرویز مشرف کراچی پہنچ گئے

پرویز مشرف کا طیارہ کراچی ایئرپورٹ لینڈ کرگیا جہاں ان کی آمد کے پیش نظر سخت سیکورٹی اقدامات کیے گئے ہیں۔

'دہشت گردی ختم کیے بغیر مضبوط دفاع کا قیام ناممکن'

مضبوط معیشت اور دہشت گردی ختم کیے بغیر ملکی دفاع کا قیام ناممکن ہے،وزیر اعظم کا کاکول اکیڈمی میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب

'سپریم کورٹ نے جمہوریت کو سہارا دینا سیکھا'

چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کا کہنا تھا کہ عدلیہ نے آئین شکنی کی روایت ختم کرکے سماجی کردار وسیع کیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔

ریویو: بھوت ناتھ - ریٹرنز

مرکزی کرداروں سے لیکر سپورٹنگ ایکٹرز سب اپنی جگہ کمال کے رہے اور جس فلم میں بگ بی ہوں اس میں چار چاند تو لگ ہی جاتے ہیں۔