24 ستمبر, 2014 | 28 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

اٹارنی جنرل کی بینچ تبدیل کرنے کی درخواست مسترد

سپریم کورٹ ۔ رائٹرز تصویر

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے این آر او عمل درآمد نظر ثانی کیس میں حکومت کی بینچ میں تبدیلی کی استدعا مسترد کردی ہے۔

جسٹس آصف سیعد کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ کے سامنے حکومت کی بارہ جولائی کے فیصلے پر نظر ثانی کی درخواست کی سماعت ہوئی۔

بنچ کے دیگر ججوں میں جسٹس سرمد جلال عثمانی، جسٹس اعجاز افضل خان، جسٹس گلزار احمد اور جسٹس  اطہر سعید شامل ہیں۔

سماعت کے آغاز پر اٹارنی جنرل عرفان قادر نے عدالت سے استدعا کی کہ موجودہ بنچ اس  کیس کی سماعت نہ کرے، جس بنچ نے فیصلہ دیا ہے وہی نظر ثانی بھی کرتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جب تک پانچوں جج نہیں آتے، جلدی بازی نہ کی جائے اور معاملے کوعید کے بعد ہی سنا جائے۔

بینچ کے سربراہ جسٹس کھوسہ نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ وہ چاروں جج یہاں موجود ہیں، جنہوں نے بارہ جولائی کا حکم جاری کیا۔

اٹارنی جنرل نے دلائل میں کہا کہ عدالت وزیر اعظم کو حکم نہیں دے سکتی کہ کیا کریں اور کیا نہ کریں، عدالت ایگزیکٹیو کے دائرہ اختیار میں مداخلت نہیں کرسکتی۔

انہوں نے مزید کہا کہ عدالت نے سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کو سزا دے کر غلطی کی، وزیر اعظم کو کسی مقدمے میں فریق بنایا جا سکتا  ہے اور نہ ہی عدالت ہدایت جاری کرسکتی ہے۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ یہ کسی کی انا کا مسئلہ نہیں، قانون کی حمکرانی اورآئین کی بالا دستی کیلئے آرٹیکل دو سو اڑتالیس - اے پر عمل ضروری ہے۔

آئندہ سماعت کل تک ملتوی کر دی گئی ہے۔

اس حصے سے مزید

سرکاری ملازمین کے ہاﺅسنگ الاﺅنس میں دوگنا اضافے کی تجویز

اس تجویز کی سمری منظوری کے لیے وزیراعظم کو بھجوا دی گئی ہے۔

عوامی تحریک کے دھرنے میں شریک گھر واپسی کے لیے بے تاب

سینکڑوں خاندان اور لڑکیاں واپس جاچکے ہیں، جبکہ مزید درجنوں خواتین اپنے علاقوں کو جلد از جلد واپس جانا چاہتی ہیں۔

چھ بڑے شہروں میں پولیو مہم کی ناکامی کا انکشاف

لاہور، راولپنڈی، کراچی، حیدرآباد، کوئٹہ اور جیکب آباد میں پولیو وائرس کے خاتمے کی مہم ناکام رہی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

سوشلزم کیوں؟

اگر ہم مسلسل بحث کرسکتے ہیں کہ جمہوریت کیوں نہیں، شریعت کیوں نہیں، تو اس سوال پر بھی بحث ضروری ہے کہ سوشلزم کیوں نہیں؟

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

بلاگ

مووی ریویو: 'خوبصورت' - فواد اور سونم کی خوبصورت کہانی

اپنے پُر مزاح کرداروں کے باوجود فلم شوخ اور رومانٹک ڈرامہ ہے، جسے آپ باآسانی ڈزنی کی طلسماتی کہانی کہہ سکتے ہیں-

کراچی میں بجلی کا مسئلہ اور نیپرا کا منفی کردار

اپنی نااہلی کی وجہ سے نیپرا نے بیرونی سرمایہ کاروں کو مشکل میں ڈال رکھا ہے، جن میں سے کچھ تو کام شروع کرنے کو تیار ہیں۔

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔