29 جولائ, 2014 | 1 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

مشرف، شوکت عزیز، شیرپاؤ کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری

نواب اکبر بگٹی کو دو ہزار چھ میں ایک فوجی آپریشن میں ہلاک کردیا گیا تھا۔ - فوٹو فائل

سبی: بلوچستان کی ایک عدالت نے نواب اکبر بگٹی قتل کیس میں سابق صدر پرویز مشرف سمیت سات ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے ہیں۔

مشرف کے علاوہ جن شخصیات کے وارنٹ جاری ہوئے ہیں ان میں سابق وزیراعظم شوکت عزیز، سابق وفاقی وزیرداخلہ آفتاب شیرپاؤ اور سابق وزیراعلٰی بلوچستان جام محمد یوسف بھی شامل ہیں۔

آج بدھ کے روزسبی میں انسداد دہشت گردی کی ایک عدالت میں بلوچ رہنما نواب اکبر بگٹی قتل کیس کی تفصیلی سماعت ہوئی۔

واضح رہے کہ عدالت اکبر بگٹی کے صاحبزادے جمیل اکبربگٹی کی درخواست پر اس کیس کی سماعت کررہی ہے۔

نواب اکبر بگٹی کو چھبیس اگست دو ہزار چھ میں ایک فوجی آپریشن کے دوران مار دیا گیا تھا۔

بعدازاں، ان کے بڑے صاحبزادے نے ایک ایف آئی آر درج کرائی جس میں سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف، سابق وزیر اعظم شوکت عزیز، اس وقت کے گورنر بلوچستان اویس غنی، وزیر خارجہ آفتاب شیر پاؤ، وزیر اعلیٰ بلوچستان جام محمد یوسف اور صوبائی وزیر داخلہ شعیب نوشیروانی کو ملزم نامزد کیا گیا تھا۔

گذشتہ مہینےعدالت نے ایف آئی آر میں نامزد تمام افراد کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے اور مزید سماعت کیلیے پندرہ اگست کی تاریخ مقرر کی تھی۔

اس حصے سے مزید

کوئٹہ ایکسپریس بم حملے میں بچ گئی

کوئٹہ میں مسافر ٹرین کے پہنچنے سے پہلے ہی بم پھٹ گیا، دھماکے سے ٹریک کو نقصان جبکہ دو افراد زخمی۔

خضدار: گریشہ میں دھماکا، سات افراد زخمی

دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو گریشہ سے ضلع خضدار کے سول ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

کوئٹہ میں فائرنگ، دو پولیس اہلکار ہلاک

سریاب روڈ پر دو نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

جنگ اور ہوائی سفر

پرواز کرنے کا معجزہ، جو انسانی ذہانت کا خوشگوار مظہر ہے، انسان کے انتقامی جذبات اور خون کی پیاس کی نذر ہوگیا ہے

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

بلاگ

ترغیب و خواہشات: رمضان کا نیا چہرہ؟

کسی مقامی رمضان ٹرانسمیشن کو لگائیں اور وہ سب کچھ جان لیں جو اب اس مقدس مہینے کے نئے چہرے کو جاننے کے لیے ضروری ہے

نائنٹیز کا پاکستان -- 1

ضیا سے مشرف کے بیچ گیارہ سال میں کبھی کرپشن کے بہانے تو کبھی وسیع تر قومی مفاد کے نام پر پانچ جمہوری حکومتیں تبدیل ہوئیں

ٹوٹے برتن

امّی کا خیال ہے کہ ایسے برتن پورے گاؤں میں کسی کے پاس نہیں۔ وہ تو ان برتنوں کو استعمال کرنے ہی نہیں دیتی

مجرم کون؟

کچھ چیزیں ڈنڈے کے زور پہ ہی چلتی ہیں، پھر آہستہ آہستہ عادت اور عادت سے فطرت بن جاتی ہیں۔