03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان کے جوہری ہتھیار محفوظ ہیں: امریکہ

یو ایس اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان وکٹوریہ نیولینڈ۔ – روئٹرز فائل فوٹو

واشنگٹن: امریکہ نے کامرہ بیس حملے میں جانی نقصان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان نےایٹمی ہتھیاروں کی حفاظت کےبہترانتظامات کررکھےہیں اور وہ ان سے مطمئن ہیں۔

یو ایس اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان وکٹوریہ نیولینڈ  نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کامرہ بیس پر حملے سے پاکستان کے جوہری ہتھیاروں کو کوئی خطرہ نہیں اور انہیں پاکستان کے اس بیان پر کوئی شک نہیں ہے کہ کامرہ بیس میں جوہری ہتھیار موجود نہیں ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ خطے میں امن کیلئے پاک افغان اور نیٹو تعاون ضروری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ جوہری ہتھیاروں کے تحفظ کیلئے پاکستان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں اور پاکستانی حکومت نے ایٹیم ہتھیاروں کی تحفظ کیلئے بہترین اقدامات کررکھے ہیں۔

اس حصے سے مزید

عمران فاروق قتل کیس میں 30 سالہ شخص گرفتار

پولیس نے ویلتھم فارسٹ میں ایک گھر پر چھاپہ مار کر جس شخص کو گرفتار کیا اس کا تعلق سیاسی جماعت سے بتایا جاتا ہے۔

اسرائیل مخالف برطانوی رکن پارلیمنٹ پر حملہ

حملہ آور نے چیختے ہوئے ہولوکاسٹ کا ذکر کیا اور جارج گیلوے کے چہرے پر مکے برسانے لگا، پولیس نے اسے گرفتار کرلیا ہے۔

دھرنوں سے پہلے نواز شریف زیادہ مقبول تھے: سروے

پیو ریسرچ سینٹر کے سروے سے معلوم ہوا ہے کہ عمران خان دھرنے سے پہلے تک ملک کے دوسرے مقبول ترین رہنما تھے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔