18 اپريل, 2014 | 17 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی ميں فائرنگ کے مختلف واقعات، دس ہلاک

۔—فائل فوٹو

کراچی: کراچی ميں فائرنگ کے مختلف واقعات ميں دس افراد کی ہلاکت کے بعد آئی جی سندھ نے رپورٹ طلب کر لی ہے۔

نارتھ کراچی ڈسکو موڑ پر موٹرسوار دہشت گردوں نے ہوٹل پر بیٹھے افراد پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں پانچ افراد زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کو فوری طور پر عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا تاہم تمام پانچوں زخمی دوران علاج دم توڑ گئے۔

نارتھ کراچی کے سيکٹر فائیو سی فور میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے تين افراد ہلاک ہوئے ۔

اس سے پہلے فیڈرل بی ایریا واٹر پمپ کے قریب مسجد کے استقبالیہ دفتر پر بیٹھے افراد پر موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں دو افراد ہلاک جبکہ ایک شخص زخمی ہوا۔

فائرنگ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل جانے سے دکانیں اور کاروبار بند ہوگیا۔

واقعے کے خلاف مشتعل افراد شاہراہ پاکستان پر نکل آئے اور احتجاج کیا جس کےباعث ٹریفک معطل ہوگیا۔

دریں اثناء ڈی سی سینٹرل کے مطابق واقعات کی تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

قبل ازیں، رضویہ سوسائٹی فردوس کالونی میں شرپسندوں نے ایک شخص کو جبکہ ناگن چورنگی کے قریب متحدہ قومی موومنٹ کے ایک کارکن کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا۔

آئی جی سندھ نے شہر کی صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے  تمام ایس ایس پیز کو ہدایت کی ہے کہ وہ سیکیورٹی کی نگرانی خود کریں جبکہ ایڈیشنل آئی جی کراچی نے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا۔۔

 

اس حصے سے مزید

ایم کیو ایم کا کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل پر احتجاج

شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے متحدہ کے رہنماؤں نے تحفظ پاکستان آرڈیننس کو کالا قانون قرار دیا۔

علماء و مشائخ کنونشن میں مذہب کے نام پر ناانصافی کی مذمت

کنونشن میں حکومت پر زور دیا گیا کہ وہ ان افراد کے خلاف کارروائی کرے، جو شدت پسندی اور دیگر واقعات میں ملوث ہیں۔

خیرپور میں گیس پائپ لائن دھماکے سے تباہ

پولیس کے مطابق دھماکے کے بعد سندھ کے مختلف شہروں میں گیس کی فراہمی معطل ہوگئی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

میانداد کا لازوال چھکا

جب بھی کوئی بیٹسمین مقابلے کی آخری گیند پر اپنی ٹیم کو چھکے کے ذریعے جتواتا ہے تو سب کو شارجہ ہی یاد آتا ہے۔

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے