23 جولائ, 2014 | 24 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستانی پالیمینٹیرینزمذاکرات کیلیے ہندوستان روانہ

۔—فائل فوٹو

لاہور: ویزا پالیسی اور تجارت سمیت مختلف امور پر بات چیت کیلیے پاکستانی پالیمینٹیرینز پر مشتمل آٹھ رکنی وفد بدھ کے روز واہگہ کے راستے ہندوستان روانہ ہو گیا۔

حکمراں جماعت پاکستان پیپلزپارٹی کے سیکرٹری جنرل اور سینیٹر جہانگیر بدر وفد کی قیادت کر رہے ہیں جبکہ دیگر ارکان میں ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی فیصل کریم کنڈی، خرم دستگیر، حاجی عدیل، نفیسہ شاہ، ندیم افضل چن، صابر بلوچ اور شازیہ مری شامل ہیں ۔

اس چار روزہ دورے میں وفد ہندوستانی پارلیمنٹیرینز کے ساتھ ملاقاتیں کرے گا۔

پاکستانی وفد نے سرحد عبور کرنے سے پہلے میڈیا سے بات چیت میں امید ظاہر کی کہ ویزا پالیسی میں نرمی کے حوالے سے مثبت پیشرفت ہو گی ۔

جہانگیربدر نے کہا کہ جنوبی ایشیا میں تجارتی سرگرمیوں کے فروغ اور قیامِ امن کے لیے کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے خواہش ظاہر کی کہ یورو زون کی طرز پر ساؤتھ ایشیا زون بھی بننا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ وفد میں چاروں صوبوں اور پارلیمنٹ میں موجود سیاسی جماعتوں کی نمائندگی شامل ہے۔

اس موقع پرحاجی عدیل نے کہا ہمسایہ ملک کے ساتھ تجارت کےعلاوہ تعلیم اور صحت کے شعبوں میں بھی تعاون بڑھانا چاہتے ہیں۔

خرم دستگیر کا کہنا تھا کہ وہ ہندوستان خیرسگالی کا پیغام لے کر جارہے ہیں۔

اس حصے سے مزید

زرداری-بائیڈن ملاقات پرافواہیں

ایک سماجی تقریب میں سابق صدر کے امریکی نائب صدر سےطے شدہ افطار- ڈنر کی خبروں نے سیاسی ماحول گرما دیا۔

'وزرائے اعلیٰ نجکاری عمل پر ہوشیار رہیں'

رضا ربانی نے چاروں وزرائے اعلیٰ کو ایک خط کے ذریعے صوبائی مفادات کے تحفظات کیلئے اقدامات اٹھانے کو کہا ہے۔

عمران خان لوگوں کو خدمت کی طرف راغب کریں، پرویز رشید

یہ وقت لانگ مارچ کا نہیں آئی ڈی پیز کی دیکھ بھال کا ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

پاکستان کے عام آدمی کا احوال

پڑھے لکھے نوجوان جو پاکستان کے چھوٹے شہروں میں رہتے ہیں وہ سب سے زیادہ مشکلات کا شکار ہیں

بلاگ

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا ہے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔

تحریکِ انصاف سے معذرت کے ساتھ

عمران خان کو ملکی اداروں پر تو اعتماد نہیں، تو پھر کیا پی ٹی آئ افغانستان کی طرح "انٹرنیشنل آڈٹ" چاہتی ہے؟

قومی شناختی کارڈ اور گونگا مصلّی -- 3

پورے پنجاب کے دیہی علاقوں میں وارداتوں کے بعد شک کی بنا پر سب سے زیادہ پکڑی جانے والی قوم مصلّیوں کی ہے۔