03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

لیاری میں آپریشن، چون ملزمان گرفتار

رینجرز کے مطابق لیاری گینگ وار کے اہم ملزمان کو بھی حراست میں لیا گیا ہے ۔ رائٹرز تصویر

کراچی: لیاری میں رینجرز کے سرچ آپریشن کے بعد کم از کم چون افراد گرفتار ہوئے ہیں۔ کارروائی کے دوران اسلحہ اور مسروقہ موٹرسائیکلیں بھی برآمد ہوئی ہیں۔

سرچ آپریشن علی الصباح شروع ہوا جس  کے دوران رینجرز کی بھاری نفری نے ریکسر لین، نوالین،کلاکوٹ،چاکیواڑہ،بغدادی اور نیاآباد کے علاقوں کامحاصرہ کرکے داخلی وخارجی راستوں کو بند کردیا تھا۔

آپریشن کےدوران رینجرز نے سات موٹرسائیکلیں اور چھ دستی بم برآمد کرکے چون افراد کوحراست میں لے لیا۔ گرفتار ہونےوالوں میں اقبال کرمانی ، اور وکیل چھوٹا شامل ہیں۔ گرفتارشُدگان میں گینگ وار کے لوگ بھی شامل ہیں۔

اسی دوران سکیورٹی فورسز نے افشانی گلی کی طرف پیش قدمی کی اور تاجو کے اڈے پربھی قبضہ کرلیا۔دوسری طرف آپریشن کےخلاف علاقہ مکینوں نے احتجاج کرتے ہوئے سڑکوں پرٹائرجلائے۔تاہم رینجرز نے مظاہرین کومنتشر ہونےپر مجبورکردیا۔علاقے سے گرفتار مشکوک افراد کوتفتیش کے لیے نامعلوم مقام پرمنتقل کردیا گیاہے۔

خبررساں ایجنسی اے پی پی کے مطابق رینجرز نے لیاری کے علاقوں افشانی گلی، آٹھ چوک، چیل چوک اور نیازی کالونی کے علاقوں میں بھی آپریشن کیا ۔

 

اس حصے سے مزید

کراچی: پولیس چوکی پر دستی بم حملہ، چار اہلکار زخمی

شاہراہِ فصل پر نرسری کے مقام پر پولیس چوکی پر دستی بم حملے سے چوکی کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

حیدر آباد: عمارت گرنے سے 13 افراد ہلاک، متعدد زخمی

چوڑی پاڑہ میں گرنے والی تین منزلہ عمارت کے ملبے تلے دب کر مرنے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

قحط کا شکار تھر، لوگ غربت کے باعث خودکشی کر رہے ہیں

محض سات مہینوں کے اندر تھرپارکر ضلع میں اکتیس افراد غربت کے باعث موت کو گلے لگا چکے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔