18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

شدت پسند گروپ کے تعاون سے پولیو مہم کامیاب

تیرہ وادی میں تقریباً 32641 بچوں کو پولیو قطرے پلائے۔گئے، سرکاری ذرائع۔ — فائل تصویر اے پی

پشاور: حکومت نے ایک کالعدم شدت پسند گروپ کے تعاون سے چار سال میں پہلی بار تیرہ وادی کے دور دراز علاقوں میں بچوں کو پولیو وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسینیشن مہم میں کامیابی حاصل کی ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق، خیبر ایجنسی کے گروپ حرکت الانصار کے تعاون سے باڑہ تحصیل کی تیرہ وادی کے پچانوے فیصد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے گئے۔

ذرائع نے اسے ایک اہم پیش رفت قرار دیا کیوں کہ اس سے قبل طالبان کے زیر کنٹرول علاقوں میں پولیو ویکسینیشن کی متعدد کوششیں ناکام ثابت ہوئی تھیں۔

ذرائع نے ڈان کو بتایا کہ تقریباً 32641 بچوں کوپولیو  قطرے پلانے کا سہرا ویکیسینیشن ٹیم اور حرکت الانصار کو جاتا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پیر اور منگل کو جاری رہنے والی اس مہم میں 11626 بچوں کو خسرہ جبکہ 3889 نومولود اور ایک ماہ سے کم عمر بچوں کو پانچ مختلف بیماریوں سے بچاؤ کی بھی ویکسینیشن دی گئی۔

حکام نے بتایا کہ گروپ نے علاقے میں مہم کی مخالفت ختم کرنے میں اہم کردارادا کیا۔

صرف چار خاندانوں نے بچوں  کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کیا ہے، تاہم انہیں رضامند کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

باڑہ میں جاری شدت پسندوں کے خلاف فوجی آپریشن کی وجہ سے اکتوبر 2009  سے اب تک پچاس فیصد بچے پولیو ویکسینیشن سے محروم رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں میں دور دراز مقامات پر بچوں تک رسائی کے لیے نئی حکمت عملی اپنائی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ گھر گھر مہم چلانے کے لیے اسکاؤٹس کی مدد حاصل کی گئی۔

اس حصے سے مزید

خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے

زلزلے کا مرکز کوہ ہندوکش کا علاقہ تھا جبکہ ریکٹر سکیل پر اس کی شدت 4.1 ریکارڈ کی گئی ۔

شمالی وزیرستان میں فضائی کارروائی، 40 شدت پسند ہلاک

ذرائع کے مطابق پاک فوج کی کارروائی میں غیر ملکیوں سمیت 40 شدت پسند ہلاک جبکہ شدت پسندوں کے پانچ ٹھکانے بھی تباہ ہوگئے۔

شمالی وزیرستان: فورسز کی چوکی پر حملہ ناکام، گیارہ شدت پسند ہلاک

ذرائع کے مطابق افغان سرحد کی جانب سے کیے گئے اس دہشت گرد حملے میں تین ایف سی اہلکار بھی ہلاک ہوئے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔