25 جولائ, 2014 | 26 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

شدت پسند گروپ کے تعاون سے پولیو مہم کامیاب

تیرہ وادی میں تقریباً 32641 بچوں کو پولیو قطرے پلائے۔گئے، سرکاری ذرائع۔ — فائل تصویر اے پی

پشاور: حکومت نے ایک کالعدم شدت پسند گروپ کے تعاون سے چار سال میں پہلی بار تیرہ وادی کے دور دراز علاقوں میں بچوں کو پولیو وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکسینیشن مہم میں کامیابی حاصل کی ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق، خیبر ایجنسی کے گروپ حرکت الانصار کے تعاون سے باڑہ تحصیل کی تیرہ وادی کے پچانوے فیصد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے گئے۔

ذرائع نے اسے ایک اہم پیش رفت قرار دیا کیوں کہ اس سے قبل طالبان کے زیر کنٹرول علاقوں میں پولیو ویکسینیشن کی متعدد کوششیں ناکام ثابت ہوئی تھیں۔

ذرائع نے ڈان کو بتایا کہ تقریباً 32641 بچوں کوپولیو  قطرے پلانے کا سہرا ویکیسینیشن ٹیم اور حرکت الانصار کو جاتا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پیر اور منگل کو جاری رہنے والی اس مہم میں 11626 بچوں کو خسرہ جبکہ 3889 نومولود اور ایک ماہ سے کم عمر بچوں کو پانچ مختلف بیماریوں سے بچاؤ کی بھی ویکسینیشن دی گئی۔

حکام نے بتایا کہ گروپ نے علاقے میں مہم کی مخالفت ختم کرنے میں اہم کردارادا کیا۔

صرف چار خاندانوں نے بچوں  کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کیا ہے، تاہم انہیں رضامند کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

باڑہ میں جاری شدت پسندوں کے خلاف فوجی آپریشن کی وجہ سے اکتوبر 2009  سے اب تک پچاس فیصد بچے پولیو ویکسینیشن سے محروم رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں میں دور دراز مقامات پر بچوں تک رسائی کے لیے نئی حکمت عملی اپنائی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ گھر گھر مہم چلانے کے لیے اسکاؤٹس کی مدد حاصل کی گئی۔

اس حصے سے مزید

پشاور: سڑک کنارے نصب دھماکا، دو افراد ہلاک

دوسری جانب جنداللہ بازار کے علاقے میں ایک ایف سی اہلکار کو نامعلوم مسلح افراد نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔

اورکزئی: مکان میں دھماکا، کمانڈر سمیت 5 جنگجو ہلاک

آوٹ میلہ کے ایک گھر میں دھماکے سے وہاں موجود پانچ مشتبہ شدت پسند ہلاک ہوگئے، سرکاری ذرائع۔

پشاور میں فائرنگ، سابق رکن قومی اسمبلی کا پرسنل سیکرٹری ہلاک

مقتول بسم اللہ کو نامعلوم افراد نے رنگ روڈ تاج آباد کے علاقے میں گولیوں کا نشانہ بنایا، پولیس۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بلاگ

گھریلو تشدد: پاکستانی 'کلچر' - حقیقت کیا ہے؟

پاکستانی سماج میں عورت مرد کی جائداد اور اس سے کمتر ہے چناچہ اس کے ساتھ کسی قسم کا سلوک روا رکھنا مرد کا پیدائشی حق ہے-

ریاستی تنہائی اور اجتماعی مہاجرت

جب تک سوچنے اور سوچ کے اظہار کے لیے ممکنہ حد تک ازادی موجود نہ ہو تب تک سماج میں تکثیریت پروان نہیں چڑھ سکتی

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔