19 اپريل, 2014 | 18 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

دو عہدوں کے خلاف کیس: سماعت چودہ ستمبر تک ملتوی

صدر آصف علی زرداری۔ — فائل فوٹو

لاہور: لاہورہائی کورٹ نے صدر آصف علی زرداری کے دو عہدے رکھنے کےخلاف دائر توہین عدالت کی درخواست پر صدر کے پرنسپل سیکرٹری کو دوبارہ نوٹس جاری کردیا ہے۔

بدھ کو چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ عمرعطابندیال کی سربراہی میں چار کنی بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔

وفاقی حکومت کی جانب سے وسیم سجاد جبکہ صدر پاکستان کی جانب سے کوئی وکیل پیش نہیں ہوا۔

سماعت کے دوران ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت سے استدعا کی کہ اٹارنی جنرل سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں مصروفیت کے باعث پیش نہیں ہو سکے لہذا سماعت ملتوی کی جائے ۔

درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ صدر مملکت کو ان کے پرنسپل سیکرٹری کے ذریعے نوٹس موصول ہو چکے ہیں اور ان کے وکیل کا آج پیش نہ ہونا بھی توہین عدالت ہے ۔

عدالت نے قرار دیا کہ اگر صدر مملکت کو کیس کے فیصلے پر اعتراضات ہیں تو وہ انہیں اپنے وکیل کے ذریعے عدالت میں پیش کر سکتے ہیں ۔

بنچ نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ عدالتیں صدر کے عہدے کا احترام کرتی ہے تاہم قانون کی بالادستی سب سے اہم ہے ۔

عدالت نے کیس کی مزید سماعت چودہ ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے صدر مملکت کو ان کے پرنسپل سیکرٹری کے ذریعے دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کیا ہے۔

بنچ نے اٹارنی جنرل کو بھی کیس میں معاونت کے لیے طلب کر کیا ہے۔

وسیم سجاد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت قانون کے مطابق کیس کی پیروی کرے گی جبکہ درخواست گزار نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی توہین عدالت کیس کی طرح وفاقی حکومت کو ہائی کورٹ میں تاخیری حربے استعمال کرنے نہیں دیں گے۔

اس حصے سے مزید

طالبان کے مطالبات قبول کرنا 'حرام' نہیں

جماعتِ اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرے۔

وزیر اعظم کیخلاف توہینِ عدالت کی درخواست مسترد

لاہور ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں مؤقف اختیار کیا کہ وزیرِ اعظم کو آئین کے تحت استثنیٰ حاصل ہے۔

ڈیرہ غازی خان: ٹریفک حادثے میں 14 ہلاکتیں

یہ واقعہ ڈیرہ غازی خان کے علاقے کوٹ چٹھہ میں اس وقت پیش آیا جب ایک تیز رفتار بس اسٹاپ پر کھڑے لوگوں پر چڑھ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

ریویو: بھوت ناتھ - ریٹرنز

مرکزی کرداروں سے لیکر سپورٹنگ ایکٹرز سب اپنی جگہ کمال کے رہے اور جس فلم میں بگ بی ہوں اس میں چار چاند تو لگ ہی جاتے ہیں۔

میانداد کا لازوال چھکا

جب بھی کوئی بیٹسمین مقابلے کی آخری گیند پر اپنی ٹیم کو چھکے کے ذریعے جتواتا ہے تو سب کو شارجہ ہی یاد آتا ہے۔

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔