17 ستمبر, 2014 | 21 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

بلوچستان بدامنی کیس میں عبوری حکم جاری

چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری ۔ فوٹو آن لائن

کوئٹہ: سپریم کورٹ رجسٹری میں بلوشستان بدامنی کیس کی سماعت شروع۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں عدالت عظمٰی کا تین رکنی بینچ کوئٹہ رجسٹری میں بلوچستان میں امن و امان سے متعلق کیس کی سماعت کررہا ہے۔

سماعت شروع ہوئی تو چیف جسٹس نے چیف سیکریٹری بابر یعقوب فتح سے پوچھا کہ آپ کو کہا تھا کہ لاپتہ افراد کے بارے میں آج حتمی رپورٹ جمع کرائیں۔

جس پر چیف سیکریٹری نے کہا کہ مزید مہلت دی جائے تاکہ بہتر نتائج عدالت کے سامنے لائے جاسکیں۔

چیف جسٹس نے کہا ہے کہ انہوں نے حکم دیا کہ جاکر لاپتہ افراد کو لے آئیں لیکن نیتجہ صفر ہے، ٹارگٹ کلنگ ختم ہوئی اور نہ ہی اغوا برائے تاوان۔

چیف جسٹس نے سیکرٹری دفاع کے متعلق دریافت کیا، جس پر ایڈووکیٹ جنرل جواب دیا کہ وہ چلے گئے ہیں۔

سپریم کورٹ نے بلوچستان بدامنی کیس میں عبوری حکم جاری کرتے ہوئے اسلحہ اور گاڑیوں کی غیرقانونی راہداریاں منسوخ کرتے ہوئے ذمہ داروں کے خلاف مقدمات درج کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

عدالت نے کمانڈر ایف سی ڈیرہ بگٹی کی چھٹیاں منسوخ کرکے انہیں پیش ہونے کا بھی حکم دیا ہے۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان: سیکیورٹی کانفرنس میں امن و امان کی صورتحال پر تبادلہ خیال

کانفرنس کے دوران ایف سی کا کہنا تھا کہ وہ امن کی بحالی کے لیے پولیس اور دیگر اداروں کے سات تعاون کرنے کے لیے تیار ہے۔

جعلی ڈگری پر مولوی آغا محمد کی اسمبلی رکنیت ختم

بلوچستان الیکشن ٹریبیونل نے مولوی آغا محمد کی ڈگری کی تصدیق نہ ہونے پر نااہل قرار دے کر دوبارہ انتخابات کا حکم دیاتھا۔

نصیر آباد: دو گروپس میں تصادم، چار افراد ہلاک

حکام کا کہنا ہے کہ پانی کے تنازع پر دو مسلح گروپس میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں چھ افراد زخمی بھی ہوئے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔