29 اگست, 2014 | 2 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

رمشا کی رہائی کا حکم جاری

کورٹ روم کے باہر پولیس کھڑے ہوئے۔ رائٹرز فوٹو

   اسلام آباد: اسلام آباد کی مقامی عدالت نے قرآن پاک کی مبینہ توہین کے الزام میں گرفتار بچی رمشا کی درخواست ضمانت منظورکر تے ہوئے پانچ لاکھہ روپے کے دو ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

آج ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اعظم خان نے کیس کی سماعت کے بعد اپنے فیصلے میں رمشا کو رہا کرنے کے علاوہ سیکورٹی خدشات کی وجہ سے اسے حفاظتی تحویل میں بھی دے دیا۔

قبل ازیں، سماعت کے دوران جج نے دونوں جانب سے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا تھا۔

رمشا کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ لڑکی  کی عمر کم ہونے کی وجہ سے اسے ضمانت پر رہا کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس کی جانب سے درج واقعے کی ایف آئی آر میں کہیں نہیں لکھا کہ لڑکی نے قرآن کی توہین کی ہے۔

دوسری جانب، درخواست گزار کے وکیل نے الزام عائد کیا کہ لڑکی اپنے جرم کا اعتراف کر چکی ہے، لہذا اسے ضمانت پر رہا نہ کیا جائے۔

کیس کے تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ امام مسجد خالد جدون نے ثبوتوں کے ساتھ ہیر پھیر کرتے ہوئے جان بوجھ کر قرآن کے اوراق کو اس تھیلی میں ڈالا جو رمشا آٹھائے ہوئے تھی۔

درخوست گزار نے الزام لگایا کہ پولیس اور ڈاکٹر عالمی دباؤ کے تحت لڑکی کو آزاد کروانے کیلیے کیس کو خراب کر رہے ہیں۔

انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ اگر لڑکی کو ضمانت پر رہا کیا گیا تو اسے بیرون ملک بھیج دیا جائے گا۔

دوسری جانب، ضلعی اٹارنی نے عدالت کو بتایا کہ رمشا نے مجسٹریٹ کے سامنے اپنی عمر سولہ سال بتائی ہے اور یہ کہ مدعی کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔

آج سماعت کے موقع پر سیکورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد کے علاوہ ، سول سوسائٹی اور عمالی میڈیا کے نمائندے بھی موجود تھے۔

اس حصے سے مزید

نواز شریف کی زبان پر بھروسہ نہیں، عمران خان

پی ٹی آئی سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم نے ملک کی خاطر نواز شریف سے بات چیت کی کوشش کی۔

پارلیمنٹ کے فلور پر جھوٹ بولا گیا، طاہر القادری

طاہر القادری کا کہنا تھا کہ میں ایک منٹ ضائع کیے بغیر وزیراعظم کا جھوٹ رد کرنے آیا ہوں، اگر چہ میری طبیعت ٹھیک نہیں ہے۔

آرمی چیف کی ثالثی عمران اور قادری کی خواہش تھی، وزیراعظم

قومی اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِاعظم نے کہا کہ ہم جمہوریت کو مستحکم کرنے کی کوششیں کررہے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

جمہوریت کے تسلسل کی ضرورت

حکومت نےکس قدر عجلت میں مذاکرات کا فیصلہ کیا، اس سے معاملات کے اوپر جی ایچ کیو کی گرفت کا اچھی طرح اندازہ ہوجاتا ہے۔

بلاگ

مووی ریویو: مردانی - پاورفل کہانی، بہترین پرفارمنس

بولی وڈ اداکار رانی مکھرجی اور طاہر بھاسن دونوں ہی اپنی بولڈ پرفارمنس کے لئے تعریف کے لائق ہیں۔

عظیم مقاصد، پر راستہ؟

اس طوفان کے نتیجے میں ان چاہی افرا تفری پھیل سکتی ہے، اسلیے اچھے مقاصد کے لیے ایسے راستے اختیار نہیں کیے جانے چاہییں۔

انقلاب معافی چاہتا ہے

ڈی چوک وہ سیاسی چراغ ہے جس کو اگر ضدی شہزادے کافی حد تک رگڑ دیں تو کچھ پتا نہیں اس میں سے انقلاب کا جن نکل ہی آئے۔

پاکستان کی نوجوان نسل اور غیرت بریگیڈ

"فحاشی" ایک دماغی بیماری ہے جس کا شکار ذہن عورت کو گھر کی دہلیز سے باہر دیکھ کر شدید 'صدمے' کا شکار ہو جاتا ہے۔