17 ستمبر, 2014 | 21 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

اے این پی کا سندھ حکومت سے علیحد گی کا اعلان

شاہی سید- اے پی پی فوٹو

کراچی: سندھ میں متعارف ہونے والے نئے بلدیاتی نظام کو یکسر مسترد کرتے ہوئے حکمراں اتحاد میں شامل عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) سندھ حکومت سے علیحدگی کااعلان کیا ہے۔

جمعہ کو اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات چیت میں اے این پی کی رہنما بشری گوہر نے کہا کہ پارٹی نے سندھ کابینہ میں شامل واحد وزیرکوحکومت سے علیحدہ ہونے کی ہدایت جاری کردی ہے۔

سینیٹر زاہد حسین نے کہا کہ صوبائی حکومت سے علیحدگی پہلا قدم ہے اور اگر اے این پی کے تحفظات دور نہ کیے گئے توقیادت سے مشاورت کے بعد آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔

اس موقع پر شاہی سید نے ایم کیوایم پر ‘دہشت گرد تنظیم’ ہونے کا الزام بھی عائد کیا ۔

انہوں نے  بلدیاتی آرڈیننس کو 'کالا قانون' اور عوام پر ظلم قرار دیا۔

اے این پی کا کہنا ہے کہ سندھ میں پیپلز لوکل گورنمنٹ آرڈیننس دو ہزار بارہ کے حوالے سے انہیں اعتماد میں نہیں لیا گیا۔

سینٹ اجلاس کے بائیکاٹ کے میڈیا سے گفتگو کرتے سینیٹر حاجی عدیل کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی سندھ میں فیصلہ کرنے کی اہلیت نہیں رکھتی، گورنر اور وزیراعلیٰ ہاﺅس میں سندھ کےخلاف سازشیں ہورہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آرڈیننس کی واپسی تک اے این پی اپنا احتجاج جاری رکھے گی۔

دوسری جانب، وزیراعلی سندھ قائم علی شاہ نے اے این پی کی ناراضگی دور کرنے کے لیے شاہی سید سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا ہے ۔

وزیراطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا ہے کہ اے این پی کے خدشات اور تحفظات دور کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماء سید سردار احمد کا کہنا ہے کہ نئے سیاسی جماعتوں کو رائے قائم کرنے سے پہلے بلدیاتی آرڈیننس  کا جائزہ لینا چاہئے۔

 

اس حصے سے مزید

عمران خان کا جمعہ کو ’گونوازگو ڈے‘‘ منانے کا اعلان

انہوں نےوزیراعظم کوچیلنج کیاہےکہ اگر نوازشریف اپنے اورخاندان کے تمام اثاثے ظاہر کر دیں تو تحریک انصاف دھرنا ختم کردےگی۔

چیف جسٹس جمہوریت کو بچائیں، عمران خان کی اپیل

پی ٹی آئی کے چیئرمین کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کا فرض ہے کہ وہ جمہوریت بچانے کے لیے اپنا آئینی کردار ادا کرے۔

عمران خان دھاندلی کے الزامات ثابت نہ کرسکے،وزیر اطلاعات

پرویزرشید کاکہناہےکہ پارلیمنٹ اورپی ٹی وی پرحملہ پر پہلے جشن منایا گیا اور مقدمات کے اندراج پر اس سے لاتعلقی ظاہر کی گئی


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ڈیم، کینال، بیراج، اور ماحول

ہندوستانی پنجاب میں زیادہ بارشیں ہوئیں، جسکی وجہ سے اپ سٹریم کا پانی پاکستانی چناب اور جہلم میں بہہ آیا ہے

انتخابی اصلاحات: اگلا قدم

بحیثیت قوم ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا، کہ اس معاملے میں سچ سب کے سامنے آئے، اور کوئی شک شبہہ باقی نا رہے۔

بلاگ

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔