27 اگست, 2014 | 30 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

اے این پی کا سندھ حکومت سے علیحد گی کا اعلان

شاہی سید- اے پی پی فوٹو

کراچی: سندھ میں متعارف ہونے والے نئے بلدیاتی نظام کو یکسر مسترد کرتے ہوئے حکمراں اتحاد میں شامل عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) سندھ حکومت سے علیحدگی کااعلان کیا ہے۔

جمعہ کو اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات چیت میں اے این پی کی رہنما بشری گوہر نے کہا کہ پارٹی نے سندھ کابینہ میں شامل واحد وزیرکوحکومت سے علیحدہ ہونے کی ہدایت جاری کردی ہے۔

سینیٹر زاہد حسین نے کہا کہ صوبائی حکومت سے علیحدگی پہلا قدم ہے اور اگر اے این پی کے تحفظات دور نہ کیے گئے توقیادت سے مشاورت کے بعد آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔

اس موقع پر شاہی سید نے ایم کیوایم پر ‘دہشت گرد تنظیم’ ہونے کا الزام بھی عائد کیا ۔

انہوں نے  بلدیاتی آرڈیننس کو 'کالا قانون' اور عوام پر ظلم قرار دیا۔

اے این پی کا کہنا ہے کہ سندھ میں پیپلز لوکل گورنمنٹ آرڈیننس دو ہزار بارہ کے حوالے سے انہیں اعتماد میں نہیں لیا گیا۔

سینٹ اجلاس کے بائیکاٹ کے میڈیا سے گفتگو کرتے سینیٹر حاجی عدیل کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی سندھ میں فیصلہ کرنے کی اہلیت نہیں رکھتی، گورنر اور وزیراعلیٰ ہاﺅس میں سندھ کےخلاف سازشیں ہورہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آرڈیننس کی واپسی تک اے این پی اپنا احتجاج جاری رکھے گی۔

دوسری جانب، وزیراعلی سندھ قائم علی شاہ نے اے این پی کی ناراضگی دور کرنے کے لیے شاہی سید سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا ہے ۔

وزیراطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا ہے کہ اے این پی کے خدشات اور تحفظات دور کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماء سید سردار احمد کا کہنا ہے کہ نئے سیاسی جماعتوں کو رائے قائم کرنے سے پہلے بلدیاتی آرڈیننس  کا جائزہ لینا چاہئے۔

 

اس حصے سے مزید

ڈیرہ اسماعیل خان: پولیس سے جھڑپ میں اہم طالبان کمانڈر ہلاک

دہشت گردوں نے ڈی پی او صادق بلوچ پر حملہ کیا تھا، جوابی کارروائی میں ولید اکبر ہلاک اور اس کا ساتھی زخمی ہوگیا۔

آئین پر یقین رکھنا جمہوریت کی فتح ہے، وزیراعظم

قومی اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ جمہوریت کے راستے میں رکاوٹ نہیں آنے دیں گے اور اس کا محاسبہ کریں گے۔

سخت سیکیورٹی میں آرمی چیف کی کراچی آمد

پاک فوج کے سربراہ کی کراچی آمد پر شاہراہِ فیصل کے ساتھ ساتھ سیکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات دیکھے گئے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

دو کشتیوں کے سوار نواز شریف

نواز شریف کے مطابق اگر ان کو طاقت کے زور پر نکالا گیا تو پاکستان کو سنبھالنا مشکل ہوجائے گا۔

پاکستان میں جمہوریت

کیا جمہوریت پاکستان میں عوام کیلیے ہے یا حکمرانوں کو انتخابات میں دوبارہ منتخب ہونے کی یقین دہانی کیلیے ہے؟

بلاگ

مووی ریویو: ٹین ایج میوٹنٹ ننجا ٹرٹلز

تباہی و بربادی کے سینز، سپر ہیروز اور ایک حسینہ والے کامیاب ثابت شدہ فارمولے فلم کا حصہ رہے۔

تجزیوں کا بخار

گھر کے تمام افراد کو اتنے گروپس میں تقسیم کیا جا سکتا ہے، جتنے کہ تجزیہ کار موجود ہیں۔

بڑے بوٹ اور چھوٹے بوٹ

پاکستانی عوام کا مزاج کہہ لیں اور ہماری سیاسی قوتوں کی کمزوری کے ہر مشکل گھڑی میں نظریں فوج کی جانب ہی اُٹھتی ہیں۔

!ٹی وی پر انقلاب دیکھنا مشکل کام

مارچ دیکھتے رہنے سے دوسرے مسائل پر سے توجہ ہٹ رہی ہے، جو زیادہ شرمناک ہیں اور جن پر کم ہی بات کی جاتی ہے۔