03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

اڑتالیس ہندوستانی ماہی گیر رہا

پولیس ہندوستان ماہی گیروں کو لے جاتے ہوئے- اے ایف پی فوٹو

کراچی: پاکستان نے پیر کو اڑتالیس ہندوستانی  ماہی گیروں کو رہا کردیا جس میں چودہ مسلمان ماہی گیر بھی شامل ہیں۔

حکومت  نے ہندوستان کے وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا کے تین روزے دورہ کے موقع پر 'جزبہ خیر سگالی'کے طور پر  اسّی میں سے اڑتالیس قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ان ماہی گیروں کو آج کراچی کی ملیر ڈسٹرکٹ جیل سے رہا کر دیا گیا۔

اس موقع پر انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات ، پاکستان فشر فولک فورم اور لیگل ایڈ تنظیم ڈبلیو کے نمائندے بھی  موجود تھے۔

رہا ہونے والے ماہی گیر کوچ کے ذریعے سخت سیکیورٹی میں لاہور روانہ ہوگئے ہیں جہاں کل انہیں واہگہ بارڈر کے راستے ہندوستانی حکام کے حوالے کردیا جائے گا۔

آئی جی جیل خانہ جات محمود صدیقی نے اس موقع پر صحافیوں کو بتایا کہ ملیر جیل میں پڑوسی ملک کے صرف بتیس قیدیوں باقی رہ گئے ہیں، جنہیں جلد رہا کردیا جائے گا۔

پی ایف ایف کے سلطان میمن کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اب تک ہندوستان کے چھ سو پچاس ماہی گیررہا کیے ہیں لیکن ہندوستان نے ابھی تک پاکستان کے ایک سو پچاس ماہی گیر رہا نہیں کیئے۔

اس حصے سے مزید

تحریک انصاف، عوامی تحریک مذاکرات میں ڈیڈلاک ختم کرنے کو تیار

قوم جلد خوشخبری سنے گی، رحمان ملک۔ حکومت کی طرف سے نہیں، عوام کی طرف سے مذاکرات کیلئے آئے تھے، سراج الحق۔

برطانیہ کا شہریوں کو پاکستان کے سفر پر انتباہ

سفارت کار، سرکاری وفود اور شہریپاکستان کے اپنے سفر پر نظرثانی کریں، دفتر خارجہ و کامن ویلتھ۔

وزیراعظم نیٹو سمٹ میں شرکت نہیں کریں گے

سیاسی بحران کے باعث وزیراعظم کا دورہ منسوخ کرکے جونیئر سفارتی عہدیدار کو پاکستان کی نمائندگی کے لیے بھیجا جائے گا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔