21 اگست, 2014 | 24 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

ہلمند میں ایک برطانوی فوجی ہلاک

لندن میں وزارتِ دفاع کے بیان میں کہا گیا ہے کہ گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جس سے ایک برطانوی فوجی ہلاک ہوگیا۔ فائل تصویر اے ایف پی

لندن: افغانستان کے شورش زدہ صوبہ ہلمند میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں ایک برطانوی فوجی ہلاک ہو گیا۔

یہ بات لندن میں وزارت دفاع نے اتوار کے روز کہی ۔

وزارت دفاع کا ایک بیان میں کہنا ہے کہ انتہائی افسوس کے ساتھ یہ اعلان کیا جاتا ہے کہ دی لائٹ ڈریگونز سے وابستہ ایک فوجی اہلکار ہلاک ہو گیا ہے. بیان میں مزید بتایا گیا کہ فوجی اس وقت ہلاک ہوا جب ایک گاڑی جس میں وہ سوار تھا جنوبی صوبہ ہلمند کے ضلع نہر سراج میں نصب کی گئی بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی ۔

اہلکار کی شناخت سے متعلق مزید کوئی تفصیلات نہیں بتائی گئی ۔ اس ہلاکت کے بعد افغانستان میں اکتوبر2011ء میں آپریشنز کے آغاز سے بعد سے اب تک ہلاک ہونیوالے برطانوی فوجیوں کی تعداد427ہوگئی ہے ان میں سے کم ازکم387فوجی لڑاکا کارروائیوں میں مارے گئے ۔

برطانیہ کے افغانستان میں9500فوجی تعینات ہیں جو کہ امریکہ کے بعد نیٹو قیادت میں بین الاقوامی سلامتی معاون فورس میں حصہ لینے والا دوسرا بڑا ملک ہے ۔

برطانوی فوجی وسطی ہلمند میں تعینات ہیں اور طالبان مزاحمت کاروں کیخلاف لڑائی اور مقامی سکیورٹی فورسز کو تربیت فراہم کررہے ہیں ۔

برطانیہ2014ء کے آخر تک اپنے تمام لڑاکا فوجیوں کو واپس بلانے کا منصوبہ رکھتا ہے ۔

اس حصے سے مزید

حقانی نیٹ ورک کے رہنماؤں کی معلومات فراہم کرنے پر رقم بڑھادی گئی

حقانی نیٹ ورک کے چار رہنماؤں کیلئے 50،50 لاکھ ڈالرکی رقم مقرر، سراج الدین حقانی کیلئے رقم بڑھا کر ایک کروڑ ڈالر کردی گئی

پاکستان کی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں، امریکا

امریکی سفارتخانے نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پرامن احتجاج اور اظہار رائے کی آزادی جمہوریت کی اہم خصوصیات ہیں۔

'امریکا پاکستان میں غیر آئینی تبدیلی کی حمایت نہیں کرے گا'

امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ نوازشریف پانچ سال کے لیے وزیراعظم منتخب ہوئے ہیں، ان سے استعفے کا مطالبہ درست نہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مضبوط ادارے

ریاستی اداروں پر تمام جماعتوں کی جانب سے حملہ تب کیا گیا جب وہ ابتدائی طور پر ہی سہی پر قابلیت کا مظاہرہ کرنے لگے تھے۔

آئینی نظام کو لاحق خطرات

پی ٹی آئی کی سیاست کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ یہ کسی طرح موجودہ آئینی صورت حال میں ممکن سیاسی حل کیلئے تیار نہیں ہے-

بلاگ

عمران خان کے نام کھلا خط

گزشتہ ایک ہفتے کے واقعات پی ٹی آئی ورکرز کی تمام امیدوں اور توقعات کو بچکانہ، سادہ لوح اور غلط ثابت کر رہے ہیں۔

جعلی انقلاب اور جعلی فوٹیجز

تحریک انصاف اور عوامی تحریک کی غیر آئینی حرکتوں کی وجہ سے اگر فوج آگئی تو چینلز ایسی نشریات کرنا بھول جائیں گے۔

!جس کی لاٹھی اُس کا گلّو

ہر دکاندار اور ریڑھی والے سے پِٹنا کوئی آسان عمل نہیں ہوگا شاید یہی وجہ ہے کہ سول نافرمانی کوئی آسان کام نہیں۔

ہمارے کپتانوں کے ساتھ مسئلہ کیا ہے؟

اس بات کا پتہ لگانا مشکل ہے کہ مصباح الحق اور عمران خان میں سے زیادہ کون بچوں کی طرح اپنی غلطی ماننے سے انکاری ہے۔