20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

امن مذاکرات میں شامل نہیں ہوں گے، طالبان

طالبان ۔ فائل تصویر رائٹرز

لندن/کابل: افغان طالبان نے اس رپورٹ کی تردید کی ہے جس میں کہا گیا تھا کہ ان کے قیادت کے ارکان  امریکا کے ساتھ ان کی افغانستان میں طویل ملٹری کی موجودگی کے حوالے سے جامع امن معاہدے کے لئے تیار ہوگئے ہیں۔

ذبیح اللہ مجاہد نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو نامعلوم جگہ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ رائل متحدہ سروسز انسٹی ٹیوٹ کی طرف سے شائع کردہ یہ رپورٹ جھوٹی اور بے بنیاد ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ کبھی نہیں چاہتے کہ افغاستان میں امریکی رہیں اور ان کا یہ موقف ہمیشہ قائم رہے گا۔

امریکا کی حامی فورسز جو کہ افغانستان میں سن دو ہزار ایک سے عسکریت پسندوں کے خلاف جنگ کررہیں ہیں، اب چاہتے ہیں طالبان کے ساتھ کوئی معاہدہ طے پاجائے کیوں کہ منصوبے کے تحت نیٹو افواج سن دو ہزار چودہ کے آخر میں افغانستان چھوڑ دیں گیں۔

اس حصے سے مزید

افغان انتخابات: ابتدائی نتائج میں عبداللہ عبداللہ پہلے نمبر پر

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ان نتائج کے مطابق اشرف عنی دوسرے اور زلمے رسول تیسرے نمبر پر ہیں۔

افغان صدارتی انتخابات کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری

پاکستان سمیت دنیا بھر نے افغانستان میں صدارتی انتخابات کی تکمیل کا خیرمقدم۔

پرامن افغان صدارتی انتخابات ختم، بھاری ٹرن آؤٹ متوقع

امریکی صدر باراک اوباما نے افغان عوام کو انتخابات میں بڑی تعداد میں شرکت پر مبارکباد دیتے ہوئے تاریخی سنگ میل قرار دیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔