24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

مستونگ میں فائرنگ، نو مزدور ہلاک

۔— فائل فوٹو

کوئٹہ: بلوچستان کے علاقے مستونگ میں نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے نو مزدور ہلاک جبکہ چار زخمی ہو گئے۔

 واقعہ جمعرات کو کوئٹہ سے تقریباً پچیس کلو میٹر دور دشت میں پیش آیا۔

 سرکاری عہدے دار عرفان شاہ نے اے ایف پی کو بتایا کہ چار سے پانچ افراد پر مشتمل مسلح گروپ نے زیر تعمیر سڑک پر کام میں مصروف مزدوروں پرفائرنگ کردی جس سے نو افراد ہلاک ہو گئے۔

 انہوں نے مزید بتایا کہ حملہ آور جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔

 پولیس افسر محمد اسمائیل نے بھی ہلاکتوں کی تعداد کی تصدیق کی ہے۔

 تاحال کسی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔

 صوبے کو فرقہ واریت، طالبان کے حملوں اور قبائلی تصادم جیسے مسائل کا سامنا ہے۔

اس حصے سے مزید

تیزاب پھینکنے کے واقعات پر بی این پی کا احتجاج

بلوچ قوم پرستوں کا کہنا تھا کہ مذہبی انتہاء پسند آزادانہ کارروائی کررہے ہیں، ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی جاتی۔

مستونگ میں دو خواتین پر تیزاب سے حملہ

تیزاب سے جھلسنے والی خواتین کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے ، جہان اُن کی حالت تشویش ناک ہے، حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب

کوئٹہ میں 3 خواتین پر تیزاب پھینک دیا گیا

سریاب کے علاقے میں حملے کا شکار ہونیوالی خواتین کو تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-