28 جولائ, 2014 | 29 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

نیب مقدمات: شریف برادران کے خلاف سماعت ملتوی

Nawaz-sharif-AP670
نواز شریف۔ فا ئل تصویر اے پی

راولپنڈی: راولپنڈی کی ایک عدالت نے شریف برادران کے خلاف ریفرنسز پر کارروائی روکنے سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کا جاری کردہ حکم امتناعی تسلیم کرتے ہوئے سماعت انتیس ستمبر تک ملتوی کردی ہے۔

 راولپنڈی کی ایک احتساب عدالت میں ہفتے کے روز مسلم لیگ ن کے رہنماوں نواز شریف اور شہباز شریف کے خلاف نیب ریفرنسز کھولنے سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔

 دوران سماعت شریف برادران کے وکلاء نے ریفرنسز پر کارروائی روکنے سے متعلق لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بینچ کا حکم امتناعی پیش کیا اور عدالت کو آگاہ کیا کہ ہائیکورٹ نے اٹھارہ ستمبر  تک کارروائی روکنے کا حکم امتناعی جاری کر رکھا ہے۔

 عدالت نے حکم امتناعی تسلیم کرتے ہوئے کیس کی سماعت انتیس ستمبر تک ملتوی کردی ہے۔

 عدالت نے شریف برادران کے وکیل اکرم شیخ کا وکالت نامہ واپس لینے کی درخواست منظور کرتے ہوئے خواجہ حارث کا وکالت نامہ بھی منظور کرلیا۔

اس حصے سے مزید

تین سالہ بچی کے ریپ کا ملزم گرفتار

پولیس کے مطابق ملزم متاثرہ بچی کا کزن ہے۔

چاند نظر آگیا، پاکستان میں کل عیدالفطر منائی جائیگی

مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے پیر کو پاکستان میں شوال کا چاند نظر آنے کا اعلان کردیا، عیدالفطر کل بروز منگل ہو گی۔

گوجرانوالہ: مبینہ توہین مذہب پر تین احمدی ہلاک

مشتعل ہجوم نے فیس بک پر مبینہ ’توہین آمیز مواد کی اشاعت‘ کے بعد احمدیوں کے 5 گھر نذرِ آتش کر دیے، رپورٹ۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

جنگ اور ہوائی سفر

پرواز کرنے کا معجزہ، جو انسانی ذہانت کا خوشگوار مظہر ہے، انسان کے انتقامی جذبات اور خون کی پیاس کی نذر ہوگیا ہے

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

بلاگ

ترغیب و خواہشات: رمضان کا نیا چہرہ؟

کسی مقامی رمضان ٹرانسمیشن کو لگائیں اور وہ سب کچھ جان لیں جو اب اس مقدس مہینے کے نئے چہرے کو جاننے کے لیے ضروری ہے

نائنٹیز کا پاکستان -- 1

ضیا سے مشرف کے بیچ گیارہ سال میں کبھی کرپشن کے بہانے تو کبھی وسیع تر قومی مفاد کے نام پر پانچ جمہوری حکومتیں تبدیل ہوئیں

ٹوٹے برتن

امّی کا خیال ہے کہ ایسے برتن پورے گاؤں میں کسی کے پاس نہیں۔ وہ تو ان برتنوں کو استعمال کرنے ہی نہیں دیتی

مجرم کون؟

کچھ چیزیں ڈنڈے کے زور پہ ہی چلتی ہیں، پھر آہستہ آہستہ عادت اور عادت سے فطرت بن جاتی ہیں۔