24 اپريل, 2014 | 23 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

پچیس ستمبر تک خط لکھنے کی مہلت

اسلام آباد: وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف سپریم کورٹ میں پیشی کے موقع پر۔— اے پی

اسلام آباد: پاکستان کی سپریم کورٹ نے صدر آصف علی زرداری کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ کھولنے کے حوالے سے سوئس حکام کو خط لکھنے کے لیے حکومت کو پچیس ستمبر تک کی مہلت دی ہے۔

وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کی جانب سے مزید ایک ماہ کی مہلت فراہم کرنے کی درخواست رد کرتے ہوئے عدالت نے حکومت کو  دو اکتوبر تک معاملہ نمٹانے کی بھی ہدایت کی ہے۔

وزیر اعظم  آج این آر او عمل درآمد کیس میں جسٹس آٓصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ کے سامنے پیش ہوئے۔

سماعت کے آغاز پر وزیر اعظم  نے عدالت کو مطلع کیا کہ وزیر قانون فاروق ایچ نائیک کو این آر او پر سابق اٹارنی جنرل ملک قیوم کا خط واپس لینے کا کہہ دیا گیا ہے۔

انہوں نے عدالت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ خط لکھنے کے حوالے سے ان پر دباؤ ہے اور سوالات بھی اٹھائے جارہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اب اس مسئلہ کوحل ہوجانا چاہیئے، عدالت تعاون کرے تاکہ معاملے کو سلجھایا جا سکے۔

انہوں نے عدالت سے حاضری کے لیے استثنیٰ کی بھی درخواست کی جسے قبول کرلیا گیا۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ مشاورت کا وقت ختم ہو گیا ہے اور اب خط لکھنا ہے۔

وزیر اعظم کی جانب سے خط کی تیاری کے لیے وقت مانگنے پر عدالت نے انہیں پچیس ستمبر تک خط تیار کرنے کی مہلت دیتے ہوئے اس حوالے سے چار ہدایات دیں۔

پہلی ہدایت یہ کہ خط لکھنے کے اختیارات کسی کو تحریری طور پر دیے جائیں گے۔دوسری ہدایت یہ ہے کہ خط لکھا جائے گا، جس کے لیے عدالت کی تسلی لازمی ہوگی۔ تیسری ہدایت خط بھجوانے کے متعلق ہے کہ خط پہنچانے والا کون ہوگا جبکہ چوتھی ہدایت یہ ہے کہ خط پہنچانے کے بعد عدالت کو آگاہ کیا جائے گا۔

وزیراعظم آج دوسری مرتبہ سخت سیکورٹی میں متعلقہ کیس میں سپریم کورٹ کے سامنے پیش ہوئے۔

اس موقع پر وزیر قانون فاروق ایچ نائیک، نوید قمر،فردوس عاشق اعوان، چوہدری شجاعت،گورنر پنجاب سردار لطیف کھوسہ اور فاروق ستار سمیت اتحادی جماعتوں کے قائدین بھی ان کے ہمراہ تھے۔

سپریم کورٹ میں صرف خصوصی پاسزرکھنے والے افراد کو داخلےکی اجازت تھی۔

اس حصے سے مزید

مشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کی درخواست پر سماعت ملتوی

کل ہی نوٹس ملا ہے اسلئے کم ازکم 15 دن کا وقت دیا جائے، اٹارنی جنرل کی سندھ ہائی کورٹ سے درخواست۔

جیو کیخلاف حکومتی درخواست پر جائزہ کمیٹی قائم

کمیٹی پیمرا کے ممبران پرویز راٹھور، اسرار عباسی اور اسماعیل شاہ پر مشتمل، حتمی فیصلہ پیمرا بورڈ کے اجلاس میں ہوگا۔

اسلام آباد میں کچی آبادیوں پر کریک ڈاؤن

اسلام آباد کی قریب ایک درجن کے قریب کچی آبادیوں کے خلاف دارالحکومت کی انتظامیہ کی کارروائی جاری ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟