01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

پچیس ستمبر تک خط لکھنے کی مہلت

اسلام آباد: وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف سپریم کورٹ میں پیشی کے موقع پر۔— اے پی

اسلام آباد: پاکستان کی سپریم کورٹ نے صدر آصف علی زرداری کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ کھولنے کے حوالے سے سوئس حکام کو خط لکھنے کے لیے حکومت کو پچیس ستمبر تک کی مہلت دی ہے۔

وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کی جانب سے مزید ایک ماہ کی مہلت فراہم کرنے کی درخواست رد کرتے ہوئے عدالت نے حکومت کو  دو اکتوبر تک معاملہ نمٹانے کی بھی ہدایت کی ہے۔

وزیر اعظم  آج این آر او عمل درآمد کیس میں جسٹس آٓصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ کے سامنے پیش ہوئے۔

سماعت کے آغاز پر وزیر اعظم  نے عدالت کو مطلع کیا کہ وزیر قانون فاروق ایچ نائیک کو این آر او پر سابق اٹارنی جنرل ملک قیوم کا خط واپس لینے کا کہہ دیا گیا ہے۔

انہوں نے عدالت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ خط لکھنے کے حوالے سے ان پر دباؤ ہے اور سوالات بھی اٹھائے جارہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اب اس مسئلہ کوحل ہوجانا چاہیئے، عدالت تعاون کرے تاکہ معاملے کو سلجھایا جا سکے۔

انہوں نے عدالت سے حاضری کے لیے استثنیٰ کی بھی درخواست کی جسے قبول کرلیا گیا۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ مشاورت کا وقت ختم ہو گیا ہے اور اب خط لکھنا ہے۔

وزیر اعظم کی جانب سے خط کی تیاری کے لیے وقت مانگنے پر عدالت نے انہیں پچیس ستمبر تک خط تیار کرنے کی مہلت دیتے ہوئے اس حوالے سے چار ہدایات دیں۔

پہلی ہدایت یہ کہ خط لکھنے کے اختیارات کسی کو تحریری طور پر دیے جائیں گے۔دوسری ہدایت یہ ہے کہ خط لکھا جائے گا، جس کے لیے عدالت کی تسلی لازمی ہوگی۔ تیسری ہدایت خط بھجوانے کے متعلق ہے کہ خط پہنچانے والا کون ہوگا جبکہ چوتھی ہدایت یہ ہے کہ خط پہنچانے کے بعد عدالت کو آگاہ کیا جائے گا۔

وزیراعظم آج دوسری مرتبہ سخت سیکورٹی میں متعلقہ کیس میں سپریم کورٹ کے سامنے پیش ہوئے۔

اس موقع پر وزیر قانون فاروق ایچ نائیک، نوید قمر،فردوس عاشق اعوان، چوہدری شجاعت،گورنر پنجاب سردار لطیف کھوسہ اور فاروق ستار سمیت اتحادی جماعتوں کے قائدین بھی ان کے ہمراہ تھے۔

سپریم کورٹ میں صرف خصوصی پاسزرکھنے والے افراد کو داخلےکی اجازت تھی۔

اس حصے سے مزید

لائن آف کنٹرول: ہندوستان کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز کے مطابق انڈین فورسز نے ایل او سی پر باغ سیکٹر میں فائرنگ کی جس کا بھر پور جواب دیا گیا۔

وزيراعظم نااہلی کيس:سپريم کورٹ کالارجربينچ بنانےکی درخواست مسترد

بینچ کے سربراہ جسٹس جواد ایس خواجہ پر اعتراض کی درخواست بھی چیف جسٹس نے مسترد کر دی، کیس کی سماعت جمعرات سے ہو گی۔

پاکستان میں پولیو کا 14سالہ ریکارڈ ٹوٹنے کے قریب

اس سے قبل 2000 میں 199 کیس رپورٹ ہوئے تھے جبکہ رواں برس 184 کیس سامنے آچکے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟