01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

'کراچی دھماکوں میں لشکر جھنگوی ملوث ہے'

کراچی: دھماکے بعد لوگ جائے وقوعہ پر جمع ہیں۔— اے ایف پی

کراچی: پولیس نے سیکورٹی اداروں کی ابتدائی تحقیقات کے حوالے سے بتایا ہے کہ گزشتہ روز کراچی میں ہونے والے دو دھماکوں میں کالعدم لشکر جھنگوی کا شجاع حیدر گروپ ملوث ہے۔

منگل کی شام نارتھ ناظم آباد میں حیدری مارکیٹ کے قریب بوہرا کمپاؤنڈ کے باہر یکے بعد دیگر دو دھماکوں میں سات افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

ڈان نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق، تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ واقعے میں مبینہ طور پر ملوث ملزمان اس سے قبل کراچی میں تین مختلف مقامات پر فرقہ ورانہ نوعیت کے بم دھماکے کر چکے ہیں۔

ملزمان کو جون دوہزار دس میں خصوصی تحقیقاتی یونٹ کی ٹیم نے کراچی میں ماری پور روڈ سے مقابلے کے بعد گرفتار کیا تھا۔

بعد ازاں یہ ملزمان سٹی کورٹس کے احاطے سے پولیس پر دستی بموں سے حملے کرتے ہوئے فرار ہوگئے تھے۔

ڈی آئی جی ویسٹ نعیم اکرم بروکا نے صحافیوں کو بتایا کہ مذکورہ بم دھماکوں میں اور کچھ عرصہ قبل چینی قونصل خانے کے باہر ہوئے دھماکوں میں مماثلت پائی جاتی ہے۔

دوسری جانب، وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے) کی ایک خصوصی ٹیم نے شواہد اکٹھا کرنے کے غرض سے حیدری میں دھماکے کی جگہ  کا دورہ کیا ہے۔

ٹیم نے اپنی ابتدائی تحقیقات میں بتایا کہ دھماکہ انتہائی شدید نوعیت کا تھا اور پانچ سے آٹھ کلو وزنی بم میں پانچ سے آٹھ سو بال بیئرنگ استعمال کیے گئے۔

واقعے کا مقدمہ نارتھ ناظم آباد تھانے میں ایکسپلوسو ایکٹ اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت سرکاری مدعیت میں درج کرلیا گیا ہے۔

اس حصے سے مزید

کراچی: ایس پی سی آئی ڈی آپریشنز چوہدری صفدر پر حملہ

حملہ کراچی کے علاقے گارڈن میں ایکسپریس وے کے قریب کیا گیا جس میں وہ محفوظ رہے، ایک حملہ آور گرفتار کرلیا گیا۔

پاکستان کے ہندو، بے وطن لوگ

روی دیوانی پاکستانی ہندوؤں کو ’’بے وطن لوگ‘‘ قرار دیتے ہیں، جو ’’ہندوستان میں پاکستانی ہیں، اور پاکستان میں ہندو‘‘۔

رحمان ملک کی جہاز سے بے دخلی، ویڈیو بنانے والا ملازمت سے فارغ

ارجمند اظہر حسین کی سابق کمپنی جیریز گروپ نے اپنے فیس بک پیج پر کہا ہے کہ یہ فیصلہ میرٹ کی بناء پر کیا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Syed
19 ستمبر, 2012 09:58
طالبان جیسے “شجرہ خبیثہ” کو خلق کرنے والی فورسز نے طالبان کے اجزائے ترکیبی میں اہم جزو “شیعہ دشمنی” رکھا ہے، گڈ طالبان، بیڈ طالبان، اینٹی پاکستان، پرو پاکستان۔۔۔ طالبان سب کے سب شیعہ دشمنی کے ایجنڈے پر اکٹھے نظر آتے ہیں۔ طالبان نوازی کی پالیسی کا سب سے زیادہ تاوان شیعہ قوم نے ادا کیا ہے، آخر کب تک اِس مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کے نام پر ملک میں فرقہ واریت کا بازار گرم رکھا جائے گا۔۔۔؟ اِن مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کی وجہ سے وہ کونسی آفت ہے جو پاکستان پر نہیں ٹوٹی، پاکستانی عوام آخر کب تک اِن غلط پالیسیوں کا خراج دیتی رہے گی۔۔۔ آخر کب تک؟
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔