30 اگست, 2014 | 3 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

'کراچی دھماکوں میں لشکر جھنگوی ملوث ہے'

کراچی: دھماکے بعد لوگ جائے وقوعہ پر جمع ہیں۔— اے ایف پی

کراچی: پولیس نے سیکورٹی اداروں کی ابتدائی تحقیقات کے حوالے سے بتایا ہے کہ گزشتہ روز کراچی میں ہونے والے دو دھماکوں میں کالعدم لشکر جھنگوی کا شجاع حیدر گروپ ملوث ہے۔

منگل کی شام نارتھ ناظم آباد میں حیدری مارکیٹ کے قریب بوہرا کمپاؤنڈ کے باہر یکے بعد دیگر دو دھماکوں میں سات افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

ڈان نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق، تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ واقعے میں مبینہ طور پر ملوث ملزمان اس سے قبل کراچی میں تین مختلف مقامات پر فرقہ ورانہ نوعیت کے بم دھماکے کر چکے ہیں۔

ملزمان کو جون دوہزار دس میں خصوصی تحقیقاتی یونٹ کی ٹیم نے کراچی میں ماری پور روڈ سے مقابلے کے بعد گرفتار کیا تھا۔

بعد ازاں یہ ملزمان سٹی کورٹس کے احاطے سے پولیس پر دستی بموں سے حملے کرتے ہوئے فرار ہوگئے تھے۔

ڈی آئی جی ویسٹ نعیم اکرم بروکا نے صحافیوں کو بتایا کہ مذکورہ بم دھماکوں میں اور کچھ عرصہ قبل چینی قونصل خانے کے باہر ہوئے دھماکوں میں مماثلت پائی جاتی ہے۔

دوسری جانب، وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے) کی ایک خصوصی ٹیم نے شواہد اکٹھا کرنے کے غرض سے حیدری میں دھماکے کی جگہ  کا دورہ کیا ہے۔

ٹیم نے اپنی ابتدائی تحقیقات میں بتایا کہ دھماکہ انتہائی شدید نوعیت کا تھا اور پانچ سے آٹھ کلو وزنی بم میں پانچ سے آٹھ سو بال بیئرنگ استعمال کیے گئے۔

واقعے کا مقدمہ نارتھ ناظم آباد تھانے میں ایکسپلوسو ایکٹ اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت سرکاری مدعیت میں درج کرلیا گیا ہے۔

اس حصے سے مزید

مفاہمتی عمل پارلیمنٹ کے ذریعے ہونا چاہیے، خورشید شاہ

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف نے کہا ہے کہ دھرنے والوں کوجمہوریت اورآئین سے پیارنہیں، عوام ہر کسی کا کردار دیکھ لیں۔

الطاف حسین کا بھی ٹیکنو کریٹ حکومت بنانے کا مطالبہ

ایم کیوایم کےقائد نےمطالبہ کرتےہوئے کہاہےکہ آئینی طریقہ ہے تو ٹھیک ہے ورنہ غیرآئینی طریقہ بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔

حکومت مظاہرین کے مطالبات پر سنجیدگی سے توجہ دے: رابطہ کمیٹی

رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں حکومت پر زور دیا گیا کہ وہ اسلام آباد میں احتجاج کرنے والی جماعتوں کے مطالبات پر توجہ دے۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Syed
19 ستمبر, 2012 09:58
طالبان جیسے “شجرہ خبیثہ” کو خلق کرنے والی فورسز نے طالبان کے اجزائے ترکیبی میں اہم جزو “شیعہ دشمنی” رکھا ہے، گڈ طالبان، بیڈ طالبان، اینٹی پاکستان، پرو پاکستان۔۔۔ طالبان سب کے سب شیعہ دشمنی کے ایجنڈے پر اکٹھے نظر آتے ہیں۔ طالبان نوازی کی پالیسی کا سب سے زیادہ تاوان شیعہ قوم نے ادا کیا ہے، آخر کب تک اِس مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کے نام پر ملک میں فرقہ واریت کا بازار گرم رکھا جائے گا۔۔۔؟ اِن مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کی وجہ سے وہ کونسی آفت ہے جو پاکستان پر نہیں ٹوٹی، پاکستانی عوام آخر کب تک اِن غلط پالیسیوں کا خراج دیتی رہے گی۔۔۔ آخر کب تک؟
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ملکی مسائل سے غیر آہنگ حکومتی پالیسیاں

کیا یہ بات سمجھ آنے والی نہیں کہ میگا پروجیکٹس پر اٹھنے والے پیسے سے پہلے توانائی کے مسئلے کو حل کر لیا جائے؟

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

بلاگ

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

‫ڈرامہ ریویو: وہ۔۔۔ دوبارہ (خوف و دہشت کا احساس)

انسان چاہے بد روحوں سے جتنا بھی ڈرے مگر ان پر بنی فلموں یا ڈراموں کو دیکھنے کا شوق پھر بھی اس کا پیچھا نہیں چھوڑتا۔

تھری ڈی پرنٹنگ پر کچھ سوالات

کچھ کیسز ضرور ہوں گے جن میں تھری ڈی پرنٹنگ کو کاپی رائیٹ مواد کی غیر قانونی نقل تیار کرنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

پانی کی کمی اور پاکستان کا مستقبل

وزرات منصوبہ بندی کے مطابق پاکستان کی پانی ذخیرہ کی صلاحیت صرف نو فیصد ہے جبکہ دنیا بھر میں یہ شرح چالیس فیصد ہے۔