03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان کا امریکہ سے باضابطہ احتجاج

پاکستان نے امریکی حکومت سے گستاخانہ فلم بنانے والوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ اے ایف پی فوٹو

اسلام آباد: پاکستان نے امریکی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے گستاخانہ فلم پر باضابطہ طور پر شدید احتجاج کیا ہے۔

جمعہ کے روز امریکی ناظم الامور رچرڈ ہوگ لینڈ کو ایک مراسلہ دیا گیا جس میں امریکی حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ متنازعہ فلم کو فوری طور پر انٹرنیٹ سے ہٹایا جائے۔

مراسلے میں فلم ساز اور دوسرے ذمہ داروں کے خلاف فوری کارروائی کا بھی کہا گیا ہے۔

پاکستان نے فلم کو دنیا بھر کے ڈیڑھ ارب مسلمانوں پر حملے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ فلم مختلف مذاہب میں نفرت پھیلانے کی سوچی سمجھی سازش ہے، جس کی پاکستان بھرپور مزمت کرتا ہے۔

امریکی قائم مقام سفیر نے اس موقع پر کہا کہ امریکی حکومت اور قیادت نے اس فلم کی شدید مزمت کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکی عوام کی اکثریت بھی اس شرمناک فلم کی مذمت کرتی ہے۔

دوسری جانب، حکومت پاکستان نے توہین رسالت کے حوالے سے بین الاقوامی قانون بنانے کی تجویز پر اسلامی دنیا کی حمایت حاصل کرنے کے لیے او آئی سی کے رکن ممالک سے ہنگامی رابطے کیے ہیں۔

ذرائع کے مطابق، صدر آصف علی زرداری یہ تجویز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اپنے خطاب میں پیش کریں گے۔

مزید برآں، وزارت خارجہ نے اسلام مخالف فلم کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پرغور اور مشاورت کے لیے او آئی سی کے رکن ممالک سے ہنگامی رابطے کیے ہیں۔

رابطوں کے ذریعے مجوزہ  قانون پر عالمی حمایت حاصل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

اس حصے سے مزید

مناسب خوراک کی کمی اور تھکاوٹ انقلابیوں پر اثرانداز ہونے لگی

یہ بدقسمتی ہے کہ یہ احتجاجی مظاہرین اس طرح کے مضر صحت ماحول میں رہنے پر مجبور ہیں۔

زرغون گیس فیلڈ سے جزوی فراہمی شروع

گیس کے اس ذخیرے کی مقدار 77 ارب مکعب فٹ ہے، یہاں سے پندرہ سال تک روزانہ دو کروڑ مکعب فٹ کی پیداوار حاصل کی جاسکتی ہے۔

برطانیہ کا شہریوں کو پاکستان کے سفر پر انتباہ

سفارت کار، سرکاری وفود اور شہریپاکستان کے اپنے سفر پر نظرثانی کریں، دفتر خارجہ و کامن ویلتھ۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔