29 اگست, 2014 | 2 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پر تشدد احتجاج میں ملوث 185 افراد کے خلاف کارروائی

راولپنڈی: مبینہ طور پر پرُ تشدد مظاہروں میں ملوث افراد کو انسداد دہشت گردی کی ایک عدالت میں پیش کیا جا رہا ہے۔— آن لائن فوٹو

کراچی: پاکستان کی عدالتوں نے کم از کم 185 افراد کے خلاف یوم عشق رسول کے موقع پر دنگے فساد اور لوٹ مار کے مقدموں میں ریمانڈ دیا ہے۔

جمعے کو حکومت کی جانب سے توہین آمیز فلم کے خلاف احتجاج منانے کے اعلان کے بعد پر تشدد واقعات میں کراچی اور پشاور میں تئیس افراد ہلاک جبکہ دو سو سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔

ہفتے کو راولپنڈی کی عدالتوں نے ستتر مشتبہ افراد کو چودہ دن کے ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھیج دیا۔

اسی طرح،  کراچی میں سینما، بینک، پولیس گاڑیاں نزرآتش اور سرکاری و نجی املاک کو نقصان پہنچانے کے الزام میں انسداد دہشت گردی کی ایک عدالت اور ایک مجسٹریٹ نے کم از کم بھہتر ملزموں کو ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے دیا۔

دو دن قبل پاکستان کے سب سے بڑے شہر میں پانچ سینما گھر، تین بینک اور لا تعداد دکانوں کی لوٹ مار کے بعد نذر آتش کرنے کے واقعات پیش آئے تھے۔

لاہور میں ایک انسداد دہشت گردی کی عدالت نے چھتیس ملزموں کو عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

ان مشتبہ افراد پر دہشت گردی، سرکاری و نجی املاک کو نقصان پہنچانےاور نذر آتش کرنے کے علاوہ اقدام قتل اور پولیس پر حملوں کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

فیصل آباد میں بھی پولیس نے ہوائی فائرنگ اور پتھراؤ کے الزمات کے تحت چار سو سے زائد افراد کے خلاف دو مقدمے درج کیے ہیں۔

ان فراد میں سے تقریباً دو سو کا تعلق کالعدم سپاہ صحابہ پاکستان سے ہے۔

فیصل آباد میں جمعے کو پر تشدد واقعات میں ساٹھ افراد زخمی ہوئے تھے جن میں سے ایک کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔

اس حصے سے مزید

وزیراعلیٰ پنجاب مستعفی ہوجائیں: منظور وٹو

پنجاب میں پیپلزپارٹی کے صدر نے کہا کہ ہم ایسے کسی بھی اقدام کی مخالفت کریں گے جس سے جمہوری نظام کو خطرہ ہو۔

لاہور: والدین کا بچوں کو پولیو کے قطرے پلوانے سے انکار

لاہور میں تین روزہ مہم کے دوران پندرہ لاکھ بچوں کو پولیو کے قطرے پلا کر پولیو سے محفوظ بنانے کا عزم کیا گیا تھا۔

ماڈل ٹاؤن ہلاکتوں کا مقدمہ درج

مقدمہ منہاج القران کےڈائریکٹر جواد حامد کی مدعیت میں وزیراعظم اور وزیراعلی پنجاب سمیت 19 افراد کیخلاف درج کیا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

جمہوریت کے تسلسل کی ضرورت

حکومت نےکس قدر عجلت میں مذاکرات کا فیصلہ کیا، اس سے معاملات کے اوپر جی ایچ کیو کی گرفت کا اچھی طرح اندازہ ہوجاتا ہے۔

بلاگ

اجتماعی سیاسی قبر

فوج کو سیاسی معاملات میں شرکت کی دعوت دینا اس بات کا ثبوت ہے کہ سیاستدان سیاسی معاملات سے نمٹنے کی طاقت نہیں رکھتے۔

مووی ریویو: مردانی - پاورفل کہانی، بہترین پرفارمنس

بولی وڈ اداکار رانی مکھرجی اور طاہر بھاسن دونوں ہی اپنی بولڈ پرفارمنس کے لئے تعریف کے لائق ہیں۔

عظیم مقاصد، پر راستہ؟

اس طوفان کے نتیجے میں ان چاہی افرا تفری پھیل سکتی ہے، اسلیے اچھے مقاصد کے لیے ایسے راستے اختیار نہیں کیے جانے چاہییں۔

انقلاب معافی چاہتا ہے

ڈی چوک وہ سیاسی چراغ ہے جس کو اگر ضدی شہزادے کافی حد تک رگڑ دیں تو کچھ پتا نہیں اس میں سے انقلاب کا جن نکل ہی آئے۔