24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

رمشا کیس جوینائل کورٹ میں چلانے کا فیصلہ

لوگ رمشا کے گھر کے پاہر جمع ہیں۔ فوٹو اے پی

اسلام آباد: اسلام آباد کی ایک عدالت نے پولیس کو مبینہ طور پر توہین مذہب کی مرتکب رمشا کے جوینائل ٹرائل کے لیے چالان پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پیر کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اسلام آباد جواد عباس نے ضلعی انتظامیہ کی جانب سے مقدمہ کی سماعت جیل میں کرنے کے حکم کو مسترد کر دیا۔

عدالت نے پولیس کو جوینائل قوانین کے مطابق چالان خصوصی عدالت میں جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

یہی عدالت اب یکم اکتوبر کو بطور جوینائل کورٹ مقدمہ کی سماعت کرے گی۔

مزید براں، عدالت نے رمشا اور امام مسجد خالد جدون کی طلبی کے نوٹس جاری کرتے ہوئے گزشتہ سماعت کے موقع پر چالان تفتیشی آفیسر اور ڈسٹرکٹ اٹارنی میں پیدا ہونے والے تنازعہ کا معاملہ مجسٹریٹ کو بھجوا دیا ہے۔

وکیل استغاثہ نے میڈیا کو بتایا کہ اگرچہ پولیس نے رمشا کو بے گناہ قرار دیا ہے تاہم وہ ثبوت اور شواہد پیش کریں گے۔

واضح رہے کہ اسلام آباد کے نواحی گاؤں میرا جعفرکی رہائشی مسیحی بچی کو سولہ جولائی کو ایک مقامی شخص کی شکایت پر پولیس نے توہین مذہب کے قانون کے تحت گرفتار کیا تھا۔

سات ستمبر کو عدالت نے رمشا کو پانچ پانچ لاکھ کے دو مچلکوں پر اڈیالہ جیل سے ضمانت پررہا کرنے کا حکم دیا تھا۔

آٹھ ستمبر کو جیل سے رہا کرنے کے بعد رمشا کو سخت حفاظتی نگرانی میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا تھا۔

اس حصے سے مزید

کسی جنرل سے رابطہ نہیں ہے،طاہر القادری

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ہم فوج کو دعوت نہیں دے رہے، ملک میں مارشل لاء نہیں لگے گا۔

پاک و ہند سیکریٹری خارجہ 25 اگست کو ملیں گے

ترجمان وزارت خارجہ کے مطابق نوازشریف اور نریندر مودی نے مئی میں نئی دہلی میں اس ملاقات پر اتفاق کیا تھا۔

چوہدری نثار سے امریکی سفیر رچرڈ اولسن کی ملاقات

خطے میں استحکام کے لیے پاک امریکہ تعاون اور رابطہ کاری کو فروغ دینا ہوگا، وزیر داخلہ چوہدری نثار۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

بلاگ

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا ہے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔