19 ستمبر, 2014 | 23 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ویمن ٹی ٹوئنٹی:پاکستان کا مایوس کن آغاز

پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم۔ —تصویر سارہ فاروقی / ڈان ۔ کام

گال: سری لنکا میں جاری ویمن ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان کی ٹیم اپنا ابتدائی میچ انگلینڈ کے ہاتھوں ہار گئی۔

جمعرات کو گال میں کھیلے گئے میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا

انگلینڈ نے ابتدا میں جارحانہ انداز اپناتے ہوئے چھ اوورز میں پچاس رنز بنائے۔ ان کی ٹیم مقررہ بیس اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 133 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

لاورا مارش نے 54 جبکہ کپتان شارلیٹ ایڈورڈز نے 45 رنز اسکور کیے۔

پاکستانی باؤلرز نے آخری اوورز میں عمدہ کم بیک کرتے ہوئے بیس رنز کے عوض  پانچ بلے بازوں کو پولین کی راہ دکھائی۔

پاکستان کی کپتان ثنا میر نے دو جبکہ ندا ڈار اور سعدیہ یوسف ایک ایک وکٹ لینے میں کامیاب رہیں۔

جواب میں پاکستان کی بیٹنگ لائن پرفارم نہ کر سکی اور پوری ٹیم صرف نوے رنز پر ڈھیر ہو گئی۔

جویریا خان نے25 اور قانیتا جلیل نے 14 رنز اسکور کیے۔

ہولی کولون نے نو رنز دے کر چار اور ڈینئیل ہیزل نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

پاکستان اپنا اگلا اہم میچ دفاعی چیمپئین آسٹریلیا کے خلاف ہفتے کو کھیلے گا۔

میچ ہارنے کی صورت میں پاکستان ایونٹ سے باہر ہو جائے گا۔

اس حصے سے مزید

سلیکٹرز ون ڈے ٹیم سے یونس خان کے اخراج کے خواہش مند

سلیکٹرز نے ون ڈے ٹیم سے یونس خان کے اخراج پر غوراور مصباح الحق سے ون ڈاﺅن پوزیشن پر کھیلنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مشکوک باؤلنگ ایکشن کے لیے سافٹ ویئر درآمد کرنے کا فیصلہ

ڈومیسٹک کرکٹ ہیڈ انتخاب عالم کے مطابق اس سافٹ ویئر سے باؤلرز کے مشکوک ایکشن کی نشاندہی کی جاسکے گی۔

’ورلڈ کپ امیدوں کا محور صرف اجمل نہیں‘

صرف اجمل ہی پوری ٹیم نہیں،ہمیں ایک کھلاڑی پر انحصار نہیں کرنا چاہیے، میانداد


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

رکاوٹیں توڑ دو

اشرافیہ تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق کرنے پر تلی ہوئی ہے جو خاص طور سے 1970ء کی دہائی کے بعد سے بد سے بدتر ہورہاہے۔

بلاگ

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔