01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

گستاخانہ فلم کا پروڈیوسر گرفتار

بچہ پاکستان کو جھنڈا پکڑے ہوئے- فائل فوٹو

لاس اینجلنس: امریکا میں گستاخانہ فلم کے پروڈیوسر کو گرفتاری کے بعد عدالت میں پیش کیا گیا۔

عدالت نے ملزم کو جیل بھیج دیا اور قانون کی خلاف ورزی سے متعلق پوچھ گچھ کی اجازت بھی دیدی۔

نکولا بیسلے نکولا کو لاس اینجلس میں حراست میں لینے کے بعد مقامی عدالت میں پیش کیے گئے۔

پراسیکیوٹر رابرٹ نے عدالت کو بتایا کہ پچپن سالہ نکولا نے آٹھ دفعہ قانون کی خلاف ورزیاں کیں ہیں جس میں  چامل پروبیشن افسران کو جھوٹے بیان دینا اور کم سے کم تین نام استعمال کرنا ہے۔

اس سماعت میں عوام کو آنے کی اجازت نہیں تھی اور صحافیوں کے لیئے الگ بلڈنگ میں وڈیو کانفرنس کے ذریعے سماعت کو دیکھنے کا انتظام تھا۔

غیر ملکی ایجنسی کے مطابق نکولا کو اس سے پہلے سن دو ہزار دس میں بینک فراڈ کرنے کے جرم میں سزا ہوچکی تھی جس کے بعد مشروط طور پر انہیں رہا کیا گیا تھا۔

معاہدے کے تحت ملزم کو انٹرنیٹ تک رسائی کی اجازت نہیں تھی۔

اس کے ساتھ ساتھ ملزم نے فلم بنا کر جیل سے رہائی کے معاہدے کی خلاف ورزی کی۔

اس حصے سے مزید

امریکا: لشکر طیبہ، حرکت المجاہدین کے حامیوں کے خلاف کارروائی

محکمہ خزانہ دونوں گروہوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں اور ان کے نیٹ ورکس کے خلاف پابندیاں لگا رہا ہے۔

ڈرون کے ذریعے فیس بک فراہم کرے گی مفت انٹرنیٹ

سولر ڈرون طیارے وائی فائی کے ذریعے ایسے علاقوں میں انٹرنیٹ فراہم کریں گے، جہاں آج بھی انٹرنیٹ کی سہولت موجود نہیں ہے۔

آئی ایس کے زیرقبضہ آئل ریفائنریوں پر فضائی حملے

دوسری جانب امریکی صدر اوباما نے کہا ہے کہ شام میں آئی ایس کے جنگجوؤں کے خطرے کا درست اندازہ نہیں لگایا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟