30 ستمبر, 2014 | 4 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی دہشت گردی کا مرکز بن گیا ہے: چیف جسٹس

چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری۔ فوٹو آن لائن

کراچی: چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے دہشت گردوں کو انجام تک نہ پہنچانے کا الزام کمزور استغاثہ اور ناقص تحقیقات پر دیتے ہوئے کہا کہ قانون کو مزید بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔

جمعے کے دن سندھ ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کی طرف سے منظم بین الاقوامی سیمینار 'قانون کے ذریعے دہشت گردی کا مقابلہ' کے افتتاحی اجلاس میں چیف جسٹس نے خطاب کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی پوری دنیا کا مشترکہ مسئلہ ہے جس سے پاکستان بھی متاثر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ صرف قانون بنانے سے کچھ نہیں ہوگا، اس کی روح کو سمجھ کر اس پر عمل کرنے سے بات بنے گی۔

چیف جسٹس نے مزید کہا کہ آگر دہشت گردی کے خلاف بنائے گئے قانون پر صحیح طریقے سے عمل کیا جائے تو ملک میں دہشت گردی ختم ہوسکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کی کاروائیاں فنڈنگ کے بغیر نہیں ہوسکتیں۔

انہوں نے پیسوں کے لین دین کے حوالے سے قانون پر کڑی مانیٹرنگ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ الیکٹرونگ لین دین کے حوالے سے بنے قانون کو بہترمفید بنانا چاہیے۔

افتخار محمد چوہدری نے کہا کہ سائبر کرائم دہشت گردی کی خطرناک قسم ہے اور اب موبائل فون بھی دھماکوں میں استعمال کیے جارہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کے ججوں نے ہر محاذ پر دہشت گردی کیخلاف آواز بلند کی۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی جو کاروبار اور تجارت کا مرکز تھا اب دہشت گردی کا مرکز بن گیا ہے اور یہی وجہ ہے عدالت میں اس کا ازخود نوٹس لیا گیا ہے تاکہ پولیس کو سیاست سے پاک کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ تقرریوں اور پوسٹنگ کے عمل میں سیاسی اثر و رسوخ کو ختم کیا جانا چاہیے۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے بار بار اپنے فیصلے میں اس بات کو واضع کیا ہے کہ قانون نافذ کرنے والی ایجنسیاں کا ایمانداری کے ساتھ کام نہایت ضروری ہے۔

اس موضوع پر مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ کالی بھیڑیں ہر ادارے میں ہوتیں ہیں اور ان سے نہ صرف اس ادارے کو تقصان پہنچتا ہے بلکہ کمیونٹی بھی نقصان اٹھاتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب اور عقیدہ نہیں ہوتا اور وہ صرف اپنے مقاصد کا حصول چاہتے ہیں۔

انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی پوری دنیا کا مشترکہ مسئلہ ہے اور نائن الیون کے بعد سے دنیا کو نئی قسم کی دہشت گردی کا سامنا ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ریاست اور ادارے بھی لسانی،مذہبی اور فرقہ وارانہ دہشت گردی کا شکار ہورہے ہیں۔ پاکستانی قوم انصاف کی سربلندی پر یقین رکھتی ہے اور دہشت گردی کیخلاف پوری قوم متحد ہے۔

اس حصے سے مزید

پاکستان کے ہندو، بے وطن لوگ

روی دیوانی پاکستانی ہندوؤں کو ’’بے وطن لوگ‘‘ قرار دیتے ہیں، جو ’’ہندوستان میں پاکستانی ہیں، اور پاکستان میں ہندو‘‘۔

رحمان ملک کی جہاز سے بے دخلی، ویڈیو بنانے والا ملازمت سے فارغ

ارجمند اظہر حسین کی سابق کمپنی جیریز گروپ نے اپنے فیس بک پیج پر کہا ہے کہ یہ فیصلہ میرٹ کی بناء پر کیا گیا ہے۔

کراچی آپریشن: ڈیڑھ ہزار سے زائد مجرم گرفتار

کراچی آپریشن میں ایم کیو ایم کے 560 کارکن اور کالعدم پیپلز امن کمیٹی کے 539 افراد گرفتار کیے، رینجرز کی سینیٹ میں رپورٹ


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔