17 اپريل, 2014 | 16 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

شریف برادران کیخلاف ریفرنسز کی سماعت ملتوی

میاں محمد نواز شریف- فائل فوٹو

راولپنڈی: احتساب عدالت راولپنڈی نے شریف برادران کے خلاف زیرالتوا ریفرنسز کے اجرا کی درخواست کی سماعت دس اکتوبر تک ملتوی کردی۔

راولپنڈی کی احتساب عدالت نمبر چار کے جج چوہدری عبدالحق نے شریف برادران کے خلاف  ریفرنسز کھولنے کیلئے دائر درخواست کی سماعت کی۔

ریفرنس کھولنے کی درخواست چیرمین نیب کی طرف سے دائر کی گئی تھی۔

دوران سماعت، نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کے معاون نے عدالت کو بتایا کہ ریفرینسز کے حوالے سے ایف آئی آر خارج کرنے کی درخواست لاہورہائی کورٹ میں دائر ہے جس کی یکم اکتوب رکو  راولپنڈی بینچ میں سماعت ہوگی۔

معاون وکیل کا کہنا تھا کہ مذکورہ درخواست کی سماعت تک نیب عدالت میں مزید کارروائی کو ملتوی کیا جائے۔

وکیل کے دلائل کے بعد نیب عدالت نے درخواست کی سماعت دس اکتوبر تک ملتوی کردی۔

قبل ازیں پندرہ ستمبر کو احتساب عدالت نے مسلم لیگ ن کے چیف نواز شریف اور ان کے خاندان کے خلاف کرپشن کے تین ریفرنسز پر کارروائی کو روک دیا تھا۔

شریف خاندان کی نمائندگی کرنے والے وکیل نے عدالت کو بتایا تھا کہ  لاہور ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے حکم دیا ہے کہ جب تک وہاں یہ معاملہ حل نہیں ہوجاتا تب تک احتساب عدلت اپنی کارروائی کو روک دے۔

اس حصے سے مزید

چیئرمین پیمرا، واپڈا عہدوں سے فارغ

وزیراعظم نے چیئرمین واپڈا سے استعفیٰ لیکر ظفر محمود کو نیا چیئرمین مقرر کردیا ہے۔

فیصل رضا عابدی کا استعفیٰ منظور

سینیٹ کے اجلاس میں فیصل نے استعفیٰ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کو پیش کیا جسے منظور کرلیا گیا ہے۔

تھری، فور جی نیلامی کے لیے چاروں کمپنیاں اہل قرار

دوسری جانب، سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی کی ذیلی کمیٹی نے پی ٹی اے اور حکومت کو نیلامی سے روک دیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔

ٹی ٹی پی نہیں تو پھر مذاکرات کیوں؟

عام آدمی کو صرف تحفظ چاہئے اور اگر مذاکرات یہ نہیں دے رہے تو ان کو مزید آگے بڑھانے سے کیا حاصل؟