23 ستمبر, 2014 | 27 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ویمن ٹی ٹوئنٹی: پاکستان کی ایک اورہار

سری لنکا: پاکستان کی ویمن کرکٹ ٹیم ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ میں شریک ہے۔— رائٹرز فوٹو

گال: پاکستان کی ویمن ٹیم آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کھانے کے بعد ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے سیمی فائنل کی دوڑ سے تقریباً باہر ہو گئی ہے۔

ہفتے کو سری لنکا کے شہر گال میں کھیلے گئے گروپ اے کے میچ کا فیصلہ ڈک ورتھ لوئس طریقے پر ہوا۔

آسٹریلیا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ بیس اوورز میں 146رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے سب سے زیادہ 42 رنز جیس کیمرون نے بنائے۔

پاکستان کی سعدیہ یوسف نے دو جبکہ ثنا میر اور اسماویہ اقبال نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

پاکستان نے ہدف کا تعاقب مایوس کن انداز میں کیا اور ابتدائی تین وکٹیں جلد ہی گر گئیں۔

پاکستان کا اسکور تین وکٹوں پر اڑتیس تھا جب بارش کی وجہ سے کھیل روکنا پڑا۔

مسلسل بارش کی وجہ سے میچ ختم کردیا گیا اور ڈک ورتھ لوئس طریقے کے تحت آسٹریلیا کی ٹیم پچیس رنز سے میچ جیت گئی۔

انگلینڈ اور اسٹریلیا سے شکست کھانے کے بعد پاکستان کے سیمی فائنل کھیلنے کے امکانات ختم ہو گئے ہیں۔

پاکستان اپنا اگلا میچ ہندوستان کے خلاف پہلی اکتوبر کو کھیلے گا۔

اس حصے سے مزید

مصباح الحق ورلڈکپ میں ہمارا اہم ہتھیار ثابت ہوسکتا ہے، وقار یونس

پاکستان کو جلدازجلد ری گروپ ہونے کی ضرورت ہے تاکہ وہ ورلڈکپ 2015 کے ٹائٹل کی دوڑ کی اہم ٹیموں میں شامل ہوسکے۔

لاہور لائنز کو کولکتہ نائٹ رائڈرز کے ہاتھوں شکست

چیمپئنز لیگ کے ساتویں میچ میں رائیڈرز نے لائنز کو چار وکٹوں سے شکست دے دی۔

'اسکواڈ کا اعلان نہ ہونے پر کوچ،کپتان ناخوش'

وقار نے آسٹریلیا سیریز کیلئے تربیتی کیمپ لگانے کی تجویز دی تھی۔ تاہم، بورڈ کی توجہ ٹی ٹوئنٹی ایونٹ پر ہے، رپورٹ۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

ذمہ داری ضروری ہے

سرکلر ڈیٹ کے لاعلاج مرض کی بدولت عالمی مالیاتی ادارے ہمارے توانائی کے منصوبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی نہیں رکھتے۔

بلاگ

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-