18 اپريل, 2014 | 17 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

ویمن ٹی ٹوئنٹی: پاکستان کی ایک اورہار

سری لنکا: پاکستان کی ویمن کرکٹ ٹیم ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ میں شریک ہے۔— رائٹرز فوٹو

گال: پاکستان کی ویمن ٹیم آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کھانے کے بعد ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے سیمی فائنل کی دوڑ سے تقریباً باہر ہو گئی ہے۔

ہفتے کو سری لنکا کے شہر گال میں کھیلے گئے گروپ اے کے میچ کا فیصلہ ڈک ورتھ لوئس طریقے پر ہوا۔

آسٹریلیا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ بیس اوورز میں 146رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے سب سے زیادہ 42 رنز جیس کیمرون نے بنائے۔

پاکستان کی سعدیہ یوسف نے دو جبکہ ثنا میر اور اسماویہ اقبال نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

پاکستان نے ہدف کا تعاقب مایوس کن انداز میں کیا اور ابتدائی تین وکٹیں جلد ہی گر گئیں۔

پاکستان کا اسکور تین وکٹوں پر اڑتیس تھا جب بارش کی وجہ سے کھیل روکنا پڑا۔

مسلسل بارش کی وجہ سے میچ ختم کردیا گیا اور ڈک ورتھ لوئس طریقے کے تحت آسٹریلیا کی ٹیم پچیس رنز سے میچ جیت گئی۔

انگلینڈ اور اسٹریلیا سے شکست کھانے کے بعد پاکستان کے سیمی فائنل کھیلنے کے امکانات ختم ہو گئے ہیں۔

پاکستان اپنا اگلا میچ ہندوستان کے خلاف پہلی اکتوبر کو کھیلے گا۔

اس حصے سے مزید

' میچ فکسرز کے ساتھ کام نہیں کرسکتا '

میچ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کے ساتھ کام نہیں کرسکتا، اسی وجہ سے چیف سیلیکٹر کا عہدہ قبول نہیں کیا، راشد لطیف۔

' چھ پاک –انڈیا سیریز کھیلے جانے کا امکان'

موجودہ فیوچر ٹور کیلنڈر میں موجود خلا کو دیکھتے ہوئے بی سی سی آئی پاکستان کے خلاف چھ سیریز کھیلنے کا سوچ رہا ہے، رپورٹ۔

فلنٹوف کی کرکٹ میں واپسی

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان انڈریو فلنٹوف کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے باوجود کلب کرکٹ میں واپسی کرسکتے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

ریویو: بھوت ناتھ - ریٹرنز

مرکزی کرداروں سے لیکر سپورٹنگ ایکٹرز سب اپنی جگہ کمال کے رہے اور جس فلم میں بگ بی ہوں اس میں چار چاند تو لگ ہی جاتے ہیں۔

میانداد کا لازوال چھکا

جب بھی کوئی بیٹسمین مقابلے کی آخری گیند پر اپنی ٹیم کو چھکے کے ذریعے جتواتا ہے تو سب کو شارجہ ہی یاد آتا ہے۔

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔