21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

'آئی ایس آئی کھر، بلاول مخالف مہم میں ملوث نہیں'

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین، بلاول بھٹو زرداری۔ —فائل تصویر

اسلام آباد: پاکستان فوج نے ایک برطانوی اخبار کی اس رپورٹ کی سختی سے تردید کی ہے جس میں  کہا گیا ہے کہ  وزیر خارجہ حنا ربانی کھر اور بلاول بھٹو زرداری کو بدنام کرنے کی مہم  میں آئی ایس آئی ملوث ہے۔

پاکستان فوج کے میڈیا ونگ آئی ایس پی آر نے ٹیلیگراف کی رپورٹ  کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ آئی ایس آئی پر  لگائے گئے الزامات  بے ہودہ ہیں۔

ترجمان  نے تردید کی ہے کہ  آئی ایس آئی  وزیر خارجہ اور بلاول کو بد نام کرنے کی کسی مہم کا حصہ ہے۔

ترجمان کے مطابق  کھر اور  آئی ایس آئی کے درمیان  کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ برطانوی اخبار کو ذمہ دارانہ رپورٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے خبر کی اشاعت سے پہلے  تصدیق کر لینا چاہیے تھی۔

ترجمان نے یہ بھی کہا کہ پاکستان برطانوی اخبار کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا حقوق محفوظ رکھتا ہے۔

ٹیلی گراف نے جمعرات کو اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ حکمراں جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے چند سینئیر رہنماؤں کے خیال میں آئی ایس آئی کھر سے ناخوش ہے۔

ان کا ماننا ہے کہ خفیہ ایجنسی وزیر خارجہ کی بلاول بھٹو زرداری سے ممکنہ شادی کی افواہیں پھیلا کر انہیں بدنام کرنا چاہتی ہے۔

برطانوی اخبار کے مطابق پی پی پی کے ان رہنماؤں کا کہنا ہے کہ آئی ایس آئی جبری گمشدگیوں پر اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ کو پاکستان بلانے پر کھر سے ناراض ہے۔

اس حصے سے مزید

سینیٹ کمیٹی یوٹیوب پابندی کے خلاف

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق نے یوٹیوب پر پابندی کے خلاف ایک قرارداد کو منظور کرلیا ہے۔

سابق چیئرمین پیمرا کا برطرفی کو عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ

چوہدری رشید کے وکیل کا کہنا ہے کہ وہ اپنے مؤکل کی برطرفی کے خلاف آج پیر کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر کریں گے۔

آئی ٹی کی وزارت آئی ٹی ماہرین کی متحمل نہیں

وزارت کے پاس آئی ٹی ماہرین کی تنخواہوں کے لیے فنڈز نہیں، چنانچہ اسکول ٹیچرز اور فاریسٹ اہلکاروں سے کام چلایا جارہا ہے۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

محمد عارف
06 اکتوبر, 2012 01:32
یہ افواہ نہیں ہے ۔ شادی ہو جائے گی ۔ جنہوں نے کرنی ہے ۔ وہ سکون سے صرف ملاقاتیں کر رہے ہیں ۔ دوسری دنیا کو پتہ نہیں کیا جلدی ہے ۔
مقبول ترین
بلاگ

'اقبال اور 'تصور اقبال

اقبال کا سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ جس کسی نے کلام اقبال سے جو نکالنا چاہا، اسے مل گیا

نریندر مودی اور نواز شریف ساتھ ساتھ

اگر بی جے پی حکومت بنانے میں کامیاب ہوتی ہے تو 1998 کی طرح آج بھی پاکستان میں نواز شریف کی ہی حکومت ہوگی۔

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-