22 ستمبر, 2014 | 26 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

تھرمل پلانٹس، تھر کوئلے پر چلانے کا فیصلہ

وزیرِ اعظم کی زیرِ صدارت تھر کوئلے کو تھرمل پلانٹس میں استعمال کرنے کی منظوری ۔ رائٹرز تصویر

حکومت نے ملک کے تمام تھرمل پاور پلانٹس کو تھر سے حاصل شدہ کوئلے پرچلانے کا فیصلہ کرلیا ہے اور وزیراعظم نے فیصلے کی باقاعدہ منظوری دے دی۔

وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کی زیر صدارت اسلام آباد میں تھرکول اینڈ انرجی بورڈ کا اجلاس ہوا۔

اجلاس میں تھرکول سے حاصل ہونے والے کوئلے کوبروئے کار لانے کا جائزہ لیا گیا، اجلاس میں ملک بھر کے تمام تھرمل پاور پلانٹس کو تھرکول سے حاصل ہونے والے کوئلے پر چلانے کا فیصلہ کیا گیا اور وزیرِ اعظم نے اس عمر کی باقاعدہ منظوری بھی دیدی۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مستقبل میں کوئی بھی تیل سے چلنے والا تھرمل پاور پلانٹ نہیں لگایا جائے گا، اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ آئندہ بجلی پیدا کرنے کے تمام منصوبے تھرکول کے کوئلے کے ذخائر کے مطابق بنائے جائیں گے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی اور اینگرو کارپوریشن تھرکول کے بلاک ٹو میں کوئلہ  نکالنے اور بجلی پیدا کرنے کے پروجیکٹس پر کام کر رہے ہیں اور وہ چھ اعشاریہ پانچ ملین ٹن کوئلہ سالانہ نکالیں گے۔

دونوں کمپنیاں بارہ سو میگاواٹ کا پاور پلانٹ بھی نصب کر رہی ہیں۔

اجلاس میں حکومت نے ان منصوبوں کے لیے گارنٹی فراہم کرنے کی منظوری بھی دی۔اجلاس کو بتایا گیا کہ آٹھ سو میگاواٹ کے موجودہ تھرمل پاور پلانٹس کو تھر کے کوئلے سے چلایا جائے گا اور جامشورو میں چھ سو میگاواٹ کے نئے پاور پلانٹس لگائے جائیں گے جو کوئلے سے چلیں گے۔

وزیراعظم نے ان منصوبوں کے لیے ایک ہفتے کے اندر معاہدہ کرنے کی بھی ہدایت کردی۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر ہم نے وقت پر فیصلے نہ کیے تو تاریخ ہمیں کبھی معاف نہیں کرے گی آج ہم نے تاریخی فیصلے کیے اور قومی وسائل سے بجلی پیدا کرنے کی نئی پالیسی دی ۔

اجلاس میں وزیراعلٰی سندھ، وزیر خزانہ، مشیر پیٹرولیم ، وزیر پانی و بجلی سمیت اعلٰی حکام نے شرکت کی۔

اس حصے سے مزید

انتخابی اصلاحات کمیٹی کی 2013 کے انتخابات میں مسائل کی نشاندہی

کمیٹی یہ جان کر حیران رہ گئی کہ 2013 کے عام انتخابات کے بیلٹ پیپرز کے لیے 66 سال پرانی مشینوں کو استعمال کیا گیا۔

متحدہ نئے صوبوں کے لیے اپنے اتحادیوں کو قائل کرے: جماعت اسلامی

جماعت اسلامی کے سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ نئے صوبوں پر ایم کیو ایم سنجیدہ ہے تو آئینی طریقہ کار اختیار کرے۔

افغان حکومتی شراکت کے معاہدے کا پاکستان کی جانب سے خیر مقدم

دفترِ خارجہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان اس معاہدے پر دستخط کو ایک مثبت پیش رفت سمجھتا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کی "مڈل کلاس" بغاوت

پاکستان کے مڈل کلاس لوگ ہی جمہوریت کے سب سے بڑے مخالف ہیں اور کچھ کیسز میں تو جمہوریت کی مخالفت بغاوت کی حد تک شدید ہے۔

!میرے پیارے اسلام آباد

میں آپ سے معافی چاہتا ہوں کہ میں نے آپ کی جانب دو دھرنے بھیجے ہیں، جنہوں نے آپ کا امن و سکون تباہ کر دیا ہے۔

بلاگ

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-