24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاک روس تعلقات میں نئے عہد کا آغاز ہورہا ہے، حناربانی

چاراکتوبر دوہزار بارہ کو دفترِخارجہ میں ہونے والے مذاکرات میں پاکستانی وزیرِ خارجہ حنا ربانی کھر اور روسی وزیرِ خارجہ سرگئی لاوروف باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو کررہے ہیں۔ اے ایف پی تصویر

اسلام آباد: روسی وزیر خارجہ سر گئی لاروف کے ساتھہ دفتر خارجہ میں مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ھوئے پاکستانی وزیرِ خارجہ حنا ربانی کھر نے کہا کہ ھر پاکستانی کی خواھش ھے کہ روس سے تعلقات بڑھے۔

حنا نے کہا کہ روسی وزیر خارجہ کے ساتھہ عالمی اور علاقائی چیلنجز پر بات ہوئی ہے۔

حنا ربانی کھر نے کہا کہ پاکستان اور روس میں نئے تعلقات کا آغاز ہورہا ھے۔ ان کا کہنا تھا کہ روسی وزیر خارجہ کے ساتھہ مزکرات میں عالمی اور علاقائی چیلنجز پر بات ہوئی ہے۔

انہوں نے روسی وزیر خارجہ کا دورہ پاکستان خطے کے امن اور استحکام کے لیے اہم ھے۔

 حنا ربانی نے کہا کہ روس کے ساتھہ تعلقات کو بڑہانا چاہتے ہیں اور اس ضمن میں دونوں ممالک کے درمیان اتفاقِ رائے پایا جاتا ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ امید ھے کہ پاکستان اور روس کے صدور جلد ملاقات کرینگے۔

حنا ربانی کھر کا مزید کہنا تھا کہ روس نے ماضی میں پاکستان کی ترقی میں اھم کردار ادا کیا ہے۔ روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف نے کہا کہ مہمان نوازی پر پاکستان کے شکر گزار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عالمی اور علاقائی حالات کے تناظر میں پاک روس تعلقات اہم ہیں۔

لاروف کا کہنا تھا کہ محلتف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق ھوا ہے۔

انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ دونوں ممالک کے درمیان سیاسی اور معاشی تعلقات فروغ پائیں گے۔

سرگئی لاروف نے کہا کہ صدر زداری کی انسداد منشیات کی تجویز کی حمایت کرتے ہیں۔

اس حصے سے مزید

ایف ڈی ایم اے کو بے گھر افراد کے لیے ڈھائی ارب روپے درکار

وفاقی حکومت پہلے ہی فاٹا ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کو نقل مکانی کرنے والے افراد کی امداد کے لیے دو ارب روپے جاری کرچکی ہے۔

پشاور میں فائرنگ، رکن قومی اسمبلی کا پرسنل سیکرٹری ہلاک

مقتول بسم اللہ کو نامعلوم افراد نے رنگ روڈ تاج آباد کے علاقے میں گولیوں کا نشانہ بنایا، پولیس۔

پی ٹی آئی لانگ مارچ، سرکاری حکمت عملی تیار

تمام ریجنل اور ڈسٹرکٹ افسران کو پی ٹی آئی کے کارکنوں سے نمٹنے کے لیے حکومتی مؤقف اور پالیسی سے آگاہ کر دیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-