23 ستمبر, 2014 | 27 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی: فیکٹری میں آگ، دو افراد زخمی

سائٹ ایریا میں پیپر اور ٹشو بنانے کی فیکٹری میں آگ لگنے کے بعد فائر بریگیڈ کی چھ سے زائد گاڑیاں آگ بجھانے میں مصروف ہیں۔ فائل فوٹو

کراچی: کراچی  کے علاقے سائٹ ایریا کی ایک فیکٹری میں آگ لگنے کی وجہ سے ایک فائر فائٹر سمیت دو افراد جھلس کر زخمی ہوگئے۔

سائٹ ایریا میں پیپر اور ٹشو بنانے کی فیکٹری میں آگ لگنے کے بعد فائربریگیڈ کی چھ سے زائد گاڑیاں آگ بجھانے میں مصرف ہیں۔

 امدادی کوششوں کے دوران فائر فائٹر سمیت دو افراد جھلس کر زخمی ہوگئے تاہم فیکٹری میں پھنسے تمام افراد کو بحفاظت نکال لیا گیا۔

 آگ فیکٹری میں جاری تعمیراتی کام کے دوران ویلڈنگ کی چنگاری کے باعث لگی۔

 آتشزدگی کے نتیجے میں لاکھو ں روپے مالیت کا سامان جل کر تباہ ہوگیا تاہم ٹشو پیپر اور پیمپر کے بڑے گودام کو جلنے سے بچالیا گیا۔

اس حصے سے مزید

خواتین پولیس کیلیے ہزار بلٹ پروف جیکٹس کی امریکی امداد

امریکی حکومت کی جانب سے سندھ پولیس کو دی گئی امداد میں چھ گاڑیاں، ایک ہزار بلٹ پروف جیکٹس اور ہیلمٹ بھی شامل ہیں۔

الطاف حسین کی سندھ میں چار صوبوں کی تجویز

انہوں نے سوال کیا کہ اگر سندھ ایک ہے تو چالیس اور ساٹھ فیصد کا کوٹہ کیوں مقرر کیا گیا ہے۔

کراچی: فائرنگ کے واقعات میں 6 افراد ہلاک

لانڈھی میں ہوٹل پرناشتہ کرنےوالے 3نوجوانوں کونشانہ بنایاگیا،پراناحاجی کیمپ،مومن آباداورلیاری میں ایک ایک شخص ہلاک ہوا


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

Raza
05 اکتوبر, 2012 11:27
Nawil nigar Razia But ka Intiqal hogaya Mujah bhot Afsos hai. Wo bhot Achi Nawil nigar thi, un k nawil per kai filma bhi bani hai
Raza
05 اکتوبر, 2012 11:31
Sahnaha Baldia Town ka Atish zadgi se bhot log mary or ab yeh shair shah ma yeh waqai hova jis ma zada logo ki Amwat nahi hoi, magar ye kab tak hota raha ga.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

ذمہ داری ضروری ہے

سرکلر ڈیٹ کے لاعلاج مرض کی بدولت عالمی مالیاتی ادارے ہمارے توانائی کے منصوبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی نہیں رکھتے۔

بلاگ

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-