18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ونی کیس: طارق مسوری عدالت میں پیش

کوئٹہ: ونی کیس میں ایم پی اے طارق مسوری عدالت میں پیش ہوگئے۔

گزشتہ روز سپریم کورٹ نے ڈیرہ بگٹی میں تیرہ بچیوں کو ونی کئے جانے کا ازخود نوٹس لیا تھا۔

رپورٹوں کے مطابق پانچ روز قبل بکر میں مبینہ طور پر رکن اسمبلی طارق مسوری بگٹی کی سربراہی میں ایک جرگے کا انعقاد ہوا تھا اور خونی تنازعے کے تصفیے کیلیے تیرہ لڑکیوں کو ونی کردیا تھا۔

تاہم طارق مسوری نے آج عدالت میں بتایا کہ جرگہ ان کی سربراہی میں نہیں ہوا اور وہ اس وقت ملتان میں تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ بارکھان ڈیرہ بگٹی سے 90 کلومیٹر دور ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل منگل کو ایک بیان میں طارق مسوری نے کہا تھا کہ انہیں جرگے کے بارے میں علم نہیں تھا اور وہ گزشتہ تین ہفتوں سے بلوچستان اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کرنے کی وجہ سے ڈیرہ بگٹی میں نہیں تھے۔

دوسری جانب عدالت میں ڈپٹی کمشنرڈیرہ بگٹی کا کہنا تھا کہ بچیوں کو لانے کے لیے دو ہیلی کاپٹر ڈیرہ بگٹی بھیج دیے ہیں۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان کے تین وزراء کے خلاف نیب کی تفتیش کا آغاز

نیب کے ڈائریکٹر سید خالد اقبال کا کہنا تھا کہ ہم تین وزراء کے خلاف کرپشن میں ملؤث ہونے کی شکایات کی تصدیق کررہے ہیں۔

بلوچستان: سیکیورٹی کانفرنس میں امن و امان کی صورتحال پر تبادلہ خیال

کانفرنس کے دوران ایف سی کا کہنا تھا کہ وہ امن کی بحالی کے لیے پولیس اور دیگر اداروں کے سات تعاون کرنے کے لیے تیار ہے۔

جعلی ڈگری پر مولوی آغا محمد کی اسمبلی رکنیت ختم

بلوچستان الیکشن ٹریبیونل نے مولوی آغا محمد کی ڈگری کی تصدیق نہ ہونے پر نااہل قرار دے کر دوبارہ انتخابات کا حکم دیاتھا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔