22 اگست, 2014 | 25 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

الطاف حسین کا علما کو چوبیس گھنٹے کا الٹی میٹم

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین۔ فائل فوٹو

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان کے مفتیان اور چوٹی کے علمائے کرام  چوبیس گھنٹے کے اندر قوم کی بیٹی ملالہ یوسف زئی پر طالبان کے بزدلانہ حملے کی مذمت کریں۔

متحدہ قومی موومنٹ کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ الطاف حسین نے کمسن ملالہ یوسف زئی پر تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے کیے گئے حملے پر علما کی جانب سے مذمت نہ کیے جانے پر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

الطاف حسین نے مفتی اعظم پاکستان سمیت تمام مفتیان کرام اور ملک کی تمام بڑی بڑی دینی درس گاہوں کے علمائے کرام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر انہوں نے چوبیس گھنٹے کےاندر قوم کی بیٹی ملالہ یوسف زئی پر طالبان کے بزدلانہ اور وحشیانہ حملے کی مذمت نہیں کی اور اپنے موقف کا کھل کر اظہار نہ کیا تو وہ بروز اتوار ملک بھر میں ایم کیو ایم کے کارکنان کے اجلاس سے اپنے خطاب میں ان علمائے کرام کو بے نقاب کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔

الطاف حسین نے کہا کہ اگر مفتیان اور علمائے کرام کی جانب سے طالبان کے بزدلانہ حملے کی مذمت نہیں کی گئی تو ایم کیو ایم کے عوامی نمائندے قومی اسمبلی میں بل پیش کریں گے کہ پاکستان میں صرف علمائے حق کو دینی تعلیم دینے کی اجازت دی جائے۔

اس حصے سے مزید

کراچی اسٹاک ایکسچینج: مندی کے رجحان میں کمی

جمعرات کو کے ایس ای ہنڈریڈ انڈیکس 400 پوائنٹس کے اضافے کے ساتھ 29 ہزار کی سطح عبور کرگیا ہے۔

'ریڈ زون سے ٹی وی کیمرے ہٹادیں، انقلاب ختم ہوجائے گا'

یہ بات ماہرِ سیاسیات و اقتصادیات ڈاکٹر اکبر زیدی نے پاکستان میں سماجی تبدیلیوں کے موضوع پر اپنے لیکچر کے دوران کہی۔

سیاسی بحران نے ڈالر کو پَر لگا دیئے

انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں ستر پیسے کا اضافہ ہوا ہے، جس کے بعد ڈالر 101روپے 10 پیسے کی قیمت کو پہنچ گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مضبوط ادارے

ریاستی اداروں پر تمام جماعتوں کی جانب سے حملہ تب کیا گیا جب وہ ابتدائی طور پر ہی سہی پر قابلیت کا مظاہرہ کرنے لگے تھے۔

آئینی نظام کو لاحق خطرات

پی ٹی آئی کی سیاست کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ یہ کسی طرح موجودہ آئینی صورت حال میں ممکن سیاسی حل کیلئے تیار نہیں ہے-

بلاگ

عمران خان کے نام کھلا خط

گزشتہ ایک ہفتے کے واقعات پی ٹی آئی ورکرز کی تمام امیدوں اور توقعات کو بچکانہ، سادہ لوح اور غلط ثابت کر رہے ہیں۔

جعلی انقلاب اور جعلی فوٹیجز

تحریک انصاف اور عوامی تحریک کی غیر آئینی حرکتوں کی وجہ سے اگر فوج آگئی تو چینلز ایسی نشریات کرنا بھول جائیں گے۔

!جس کی لاٹھی اُس کا گلّو

ہر دکاندار اور ریڑھی والے سے پِٹنا کوئی آسان عمل نہیں ہوگا شاید یہی وجہ ہے کہ سول نافرمانی کوئی آسان کام نہیں۔

ہمارے کپتانوں کے ساتھ مسئلہ کیا ہے؟

اس بات کا پتہ لگانا مشکل ہے کہ مصباح الحق اور عمران خان میں سے زیادہ کون بچوں کی طرح اپنی غلطی ماننے سے انکاری ہے۔