21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

الطاف حسین کا علما کو چوبیس گھنٹے کا الٹی میٹم

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین۔ فائل فوٹو

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان کے مفتیان اور چوٹی کے علمائے کرام  چوبیس گھنٹے کے اندر قوم کی بیٹی ملالہ یوسف زئی پر طالبان کے بزدلانہ حملے کی مذمت کریں۔

متحدہ قومی موومنٹ کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ الطاف حسین نے کمسن ملالہ یوسف زئی پر تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے کیے گئے حملے پر علما کی جانب سے مذمت نہ کیے جانے پر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

الطاف حسین نے مفتی اعظم پاکستان سمیت تمام مفتیان کرام اور ملک کی تمام بڑی بڑی دینی درس گاہوں کے علمائے کرام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر انہوں نے چوبیس گھنٹے کےاندر قوم کی بیٹی ملالہ یوسف زئی پر طالبان کے بزدلانہ اور وحشیانہ حملے کی مذمت نہیں کی اور اپنے موقف کا کھل کر اظہار نہ کیا تو وہ بروز اتوار ملک بھر میں ایم کیو ایم کے کارکنان کے اجلاس سے اپنے خطاب میں ان علمائے کرام کو بے نقاب کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔

الطاف حسین نے کہا کہ اگر مفتیان اور علمائے کرام کی جانب سے طالبان کے بزدلانہ حملے کی مذمت نہیں کی گئی تو ایم کیو ایم کے عوامی نمائندے قومی اسمبلی میں بل پیش کریں گے کہ پاکستان میں صرف علمائے حق کو دینی تعلیم دینے کی اجازت دی جائے۔

اس حصے سے مزید

کندھ کورٹ: مسافر بس الٹنے سے چھ مسافر زخمی

یہ حادثہ ضلع کندھ کوٹ کے قریب غوثپور کے مقام پر پیش آیا، جبکہ زخمیوں کو قریبی پسپتال منتقل کردیا گیا۔

سکھر: بس- ٹرالر میں تصادم، 41 افراد ہلاک

حادثہ اس وقت پیش آیا جب کراچی سے ڈیرہ غازی خان جانے والی بس پنوں عاقل کے قریب سامنے سے آنے والے ٹریلرسے ٹکراگئی۔

اقوامِ متحدہ نے اپنے دوکارکن لاپتہ ہونے کی تصدیق کردی

اقوامِ متحدہ کی ذیلی تنظیم یونیسیف کے مقامی ارکان کراچی کے باہر ایک تفریحی مقام سے لاپتہ ہوئے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔