16 ستمبر, 2014 | 20 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ملالئے حملے میں ملوث چند افراد گرفتار، پولیس

ملالہ یوسفزئی- فائل فوٹو

مینگورہ: سوات پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے سوات سے تعلق رکھنے والی بین الاقوامی شہرت یافتہ امن کی کارکن ، ملالہ یوسفزئٰی پر حملے میں ملوث چند افراد کو گرفتار کیا ہے۔ ملالے کو سوات میں خصوصاً لڑکیوں کی تعلیم کے فروغ اور طالبان پر تنقید کرنے کے پاداش میں نشانہ بنایا گیا تھا اور طالبان نے اس کی ذمے داری قبول کرلی تھی۔

مینگورہ کے ایک سینیئر پولیس اہلکار، افضل خان آفرہد ی نے بتایا کہ پولیس نے اس واقعے میں ملوث افراد کو گرفتار کیا ہے۔

انہوںنے ان افراد کی تعداد بتانے سے گریز کیا نہ ہی یہ بتایا کہ ملالہ پر حملے میں ان کا کیا کردار تھا اور یہ بھی نہیں بتایا کہ پولیس نے ان ملزمان کو گرفتار کیسے کیا ہے۔

واضح رہے کہ ملالہ کو منگل کے روز اسکی دو سہیلیوں کے ساتھ اس وقت گولی ماری گئی جب وہ اسکول وین میں بیٹھ کر اپنے گھر آرہی تھی۔ اب وہ راولپنڈی کے ایک ہسپتال میں زیرِ علاج ہیں۔

چھتیس سے اڑھتالیس گھنٹے اہم قرار

دوسری جانب  پاکستان فوج کے ترجمان نے کہا ہے کہ ملالہ یوسف زئی کی حالت پہلے سے بہتر ہے تاہم آئندہ چھتیس سے اڑتالیس گھنٹے اہم ہوں گے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے سربراہ میجرجنرل عاصم باجوہ کے مطابق ملالہ کو ڈاکٹروں کی ہدایت پر راولپنڈی منتقل کیا گیا ہے۔

انہوں نے جمعہ کو میڈیا بریفنگ کے دوران بتایا کہ ملالہ کے ٹیسٹ لیے جارہے ہیں اور اس کے علاوہ میجر جنرل کی سربراہی میں میڈیکل ٹیم تشکیل بھی دے دی گئی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پینل میں تمام ڈاکٹرز پاکستانی ہیں تاہم دو غیر ملکی ڈاکٹرز سے بھی مشورہ لیا گیا ہے۔

باجوہ کا کہنا تھا کہ سوات میں عسکریت پسندوں کے ہاتھوں زخمی ہونے والی بچیوں کے والدین کے حوصلے بلند ہیں اور ملزمان کی گرفتاری کے لیے کوششیں جاری ہیں۔

بیرون ملک علاج کے لیے بھیجنے کےحوالے سے انہوں نے کہا کہ ملالہ کو بیرون ملک منتقل کرنے کا فیصلہ میڈیکل بورڈ ہی کرے گا۔

اس حصے سے مزید

پی ٹی وی حملہ کیس نے اسلام آباد پولیس کو کردیا شرمندہ

پولیس نے پی ٹی وی حملہ کیس میں سرکاری چینیل کے ہی دو ملازمین کو ملزمان میں شامل کردیا تھا۔

پی ٹی آئی مظاہرین اور پولیس کے درمیان معمولی تصادم

پی ٹی آئی کے پانچ اراکین نادرا چوک کے راستے دھرنے کے مقام کی جانب جارہے تھے کہ پولیس نے انہیں حراست میں لے لیا۔

انقلابیوں اور آزادی کے متوالے اپنی جنگ کو لے گئے عدالتوں میں

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی نےگرفتار افراد کی رہائی کے لیے عدالتوں سے رجوع کیا اور حکومتی اداروں پر جوابی قانونی حملہ کیا۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

ALi
13 اکتوبر, 2012 05:09
apko 69 bachay jo madarsay me parhay hoy amrici dron me shaheed hoy wo nazar nai aty ?
razia
24 مارچ, 2013 05:11
malala ko itna imptant ku banaya hua hai....us k ilawa b itne masoom logo ka qatl e aam ho raha hai
سروے
مقبول ترین
قلم کار

باغیوں کی ضرورت ہے

موجودہ حکومت انتہائی قابل سول سرونٹس کو بھی صرف اس لیے ناپسند کرتی ہے، کیونکہ وہ درباریوں کی طرح نیازمندی نہیں دکھاتے۔

چھوٹے باغیچوں کی اہمیت

غریب خواتین کو لیز پر چھوٹے پلاٹ دیے جاسکتے ہیں، جہاں وہ اپنے گھر والوں کے لیے کھانے کی چیزیں اگا سکیں۔

بلاگ

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔

ماضی کی جھلکیاں، میرانِ تالپورکے مقبرے

یہ دیکھ کر بہت افسوس ہوتا ہے کہ مزارات کافی خراب حالت میں ہیں۔ یہ بھی نہیں کہا جا سکتا کہ کس وقت دیواریں منہدم ہوجائیں۔

ٹیم کو محمد حفیظ کی ضرورت ہے

ٹی-20 اور ون ڈے، دوںوں ہی میں وہ سب سے اچھے آل راؤنڈر ہیں، اور یہاں وہ پاکستان کے لیے اپنی خدمات انجام دے سکتے ہیں۔