18 اپريل, 2014 | 17 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

ایفیڈرین کیس: موسٰی گیلانی کی ضمانت کی توثیق

علی موسی گیلانی ۔—فائل/ آن لائن فوٹو

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے ایفیڈرین کوٹہ کیس میں وفاقی وزیر مخدوم شہاب الدین اور علی موسٰی گیلانی کی ضمانت کی توثیق کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ جب تک مقدمہ کی سماعت عدالت میں جاری ہے دونوں کی ضمانت برقرار رہے گی۔

جسٹس ناصرالملک کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے مخدوم شہاب الدین اور علی موسٰی گیلانی کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی۔

عدالت نے تمام فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد علی موسیٰ گیلانی اور مخدوم شہاب الدین کی ضمانت ایفیڈرین کیس کی سماعت جاری رہنے تک برقرار رہنے کا حکم دیا۔

قبل ازیں موسٰی گیلانی کے وکیل خالد رانجھا نے عدالت کے روبرو اپنے دلائل مکمل کرتے ہوئے کہا کہ ان کے مؤکل پر پیسے لینے اور سیاسی اثر و رسوخ استعمال کرنے کے الزامات ثابت نہیں ہوئے جبکہ وعدہ معاف گواہوں کے بیانات بھی بعد میں لیے گئے۔

جسٹس طارق پرویز نے خالد رانجھا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے مؤکل پر ایفیڈرین رکھنے کا الزام نہیں صرف سیاسی اثر و رسوخ اور فون کالز کرنے کا الزام ہے۔

جس پر خالد رانجھا نے کہا کہ تمام پارلیمینٹیرینز اپنے حلقہ کے لوگوں کے کام کرنے کیلیئے فون کالز کرتے ہیں لیکن موسٰی گیلانی نے ایسی کوئی کال نہیں کی۔

اے این ایف کے وکیل شاہد عباسی نے دونوں شخصیات کے وکلاء کے دلائل پر جوابی دلائل مکمل کرتے ہوئے کہا کہ اے این ایف کا دائرہ اختیار یہ ہے کہ ایفیڈرین کا غلط استعمال ہوا ہے یا نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس سارے کیس میں سیاسی دباؤ استعمال کیا گیا جبکہ ایک سال میں تمام ادویہ ساز کمپنیوں کا ایفیڈرین حاصل کرنے کا کوٹہ پانچ ہزار تین سو دس کلو گرام تھا لیکن اس کیس میں ساڑھے نو ہزار کلو گرام سے زائد ایفیڈرین حاصل کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ موسٰی گیلانی کے پی اے توقیر نے جو اثر و رسوخ استعمال کیا وہ ریکارڈ پر ہے۔ جسٹس ناصر الملک نے استفسار کیا کہ کیا ایسا کوئی ثبوت موجود ہے کہ ایفیڈرین کو نشے کے طور پر استعمال کیا گیا ہو جس پر اے این ایف کے وکیل خاموش ہو گئے۔

بعد ازاں عدالت نے مخدوم شہاب الدین اور علی موسٰی گیلانی کی ضمانتوں کی توثیق کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے علی موسٰی گیلانی نے کہا کہ آج یہ ثابت ہو گیا کہ اے این ایف نے اُنہیں سیاسی طور پر نشانہ بنانے کی کوشش کی لیکن وہ کامیاب نہیں ہوئے۔

مخدوم شہاب الدین نے کہا کہ وہ حق اور سچ پر تھے۔

اس حصے سے مزید

پروسیکیوٹر کی تقرری سے متعلق مشرف کی درخواست مسترد

خصوصی عدالت نے اپنے فیصلے میں درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کیا۔

اسلام آباد منڈی دھماکے کی تفتیش میں امرود فرم کا منیجر گرفتار

حکام کے مطابق تقریباً 40 پیٹیاں ایک مسافر بس کی چھت پر لوڈ کرکے اسلام آباد کی پھل و سبزی کی مارکیٹ میں لائی گئیں تھیں۔

چیئرمین پیمرا، واپڈا عہدوں سے فارغ

وزیراعظم نے چیئرمین واپڈا سے استعفیٰ لیکر ظفر محمود کو نیا چیئرمین مقرر کردیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

ریویو: بھوت ناتھ - ریٹرنز

مرکزی کرداروں سے لیکر سپورٹنگ ایکٹرز سب اپنی جگہ کمال کے رہے اور جس فلم میں بگ بی ہوں اس میں چار چاند تو لگ ہی جاتے ہیں۔

میانداد کا لازوال چھکا

جب بھی کوئی بیٹسمین مقابلے کی آخری گیند پر اپنی ٹیم کو چھکے کے ذریعے جتواتا ہے تو سب کو شارجہ ہی یاد آتا ہے۔

جمہوریت، سیکولر ازم اور مذہبی سیاسی جماعتیں

مذہب کے نام پر کوئی متفقہ سیاسی نظام بن ہی نہیں سکتا کیونکہ مذاہب کے درجنوں دھڑے کسی ایک ایشو پر متفق نہیں ہو سکتے۔

یکسانیت اور رنگا رنگی

یکسانیت جانی پہچانی بلکہ اطمینان بخش بھی ہوسکتی ہے، لیکن اس کا مطلب ہے چیلنج سے بچنا، جس کے بغیر کامیابی ممکن نہیں۔