24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

طالبان کے اورکزئی کے سربراہ گرفتار، کالعدم تنظیم کی تردید

پشاور پولیس۔ فائل فوٹو

نوشہرہ: پولیس نے منگل کو تحریک طالبان پاکستان کے اورکزئی کے سربراہ قاری سعید کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے تاہم کالعدم تنظیم کے ترجمان نے اس بات کی تردید کی ہے۔

ڈان نیوز کے نمائندے ظاہر شاہ شیرازی کے مطابق قاری سعید کو پولیس نے نوشہرہ کی پبی تحصیل کے بندہ نبی گاؤں سے ایک چھاپے کے دوران گرفتار کیا۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ انہیں شبہ تھا کہ قاری سعید خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات میاں افتخار حسین کے بیٹے میاں راشد حسین کی دوسری برسی کی تقریب کو تباہ کرنا چاہتے ہیں۔

راشد حسین کو جولائی 2010 میں ضلع نوشہرہ میں ان کے آبائی علاقے پبی میں گولیوں کا نشانہ بنا کر ہلاک کردیا گیا تھا۔

دریں اثنا تحریک طالبان کے ترجمان احسان اللہ احسان نے نامعلوم مقام سے ڈان نیوز کے نمائندے ظاہر شاہ سے ٹیلیفون پر بات کرتے ہوئے قاری سعید کی گرفتاری کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ قاری سعید بالکل محفوظ ہیں۔

اس حصے سے مزید

سراج الحق وزیر خزانہ خیبر پختونخوا کے عہدے سے مستعفی

جماعت اسلامی امیر سراج الحق نے وزیر خزانہ خیبر پختونخوا کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

پشاور: پولیس پر دو مختلف حملے، اہلکار ہلاک، ڈی ایس پی زخمی

گزشتہ دو ہفتوں کے دوران پشاور میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں سات پولیس اہلکار ہلاک جبکہ دس زخمی ہوچکے ہیں۔

پشاور: ایمرٹس اور اتحاد ایئرویز کی پشاور سروس بحال

معطلی کے بعد ایمرٹس ایئرلائنز 24 جولائی جبکہ اتحاد ایئرلائنز یکم اگست سے پشاورکے لیے فلائٹ سروس دوبارہ شروع کرے گی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-