29 جولائ, 2014 | 1 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

طالبان کے اورکزئی کے سربراہ گرفتار، کالعدم تنظیم کی تردید

پشاور پولیس۔ فائل فوٹو

نوشہرہ: پولیس نے منگل کو تحریک طالبان پاکستان کے اورکزئی کے سربراہ قاری سعید کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے تاہم کالعدم تنظیم کے ترجمان نے اس بات کی تردید کی ہے۔

ڈان نیوز کے نمائندے ظاہر شاہ شیرازی کے مطابق قاری سعید کو پولیس نے نوشہرہ کی پبی تحصیل کے بندہ نبی گاؤں سے ایک چھاپے کے دوران گرفتار کیا۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ انہیں شبہ تھا کہ قاری سعید خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات میاں افتخار حسین کے بیٹے میاں راشد حسین کی دوسری برسی کی تقریب کو تباہ کرنا چاہتے ہیں۔

راشد حسین کو جولائی 2010 میں ضلع نوشہرہ میں ان کے آبائی علاقے پبی میں گولیوں کا نشانہ بنا کر ہلاک کردیا گیا تھا۔

دریں اثنا تحریک طالبان کے ترجمان احسان اللہ احسان نے نامعلوم مقام سے ڈان نیوز کے نمائندے ظاہر شاہ سے ٹیلیفون پر بات کرتے ہوئے قاری سعید کی گرفتاری کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ قاری سعید بالکل محفوظ ہیں۔

اس حصے سے مزید

لانگ مارچ پر حکومت سے 'ڈیل' کی تردید

عمران خان کا کہنا ہے کہ آئی ڈی پیز کے معاملے میں وفاقی حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری نہیں کررہی۔

چودہ اگست سے بروغل فیسٹیول کا آغاز

چترال سے 260 کلومیٹر کے فاصلے پر بروغل کی جنت نظیر وادی سطح سمندر سے 13 ہزار فٹ بلندی پر واقع ہے۔

لوئر دیر: سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ سے ایک خاتون ہلاک

سرچ آپریشن کے دوران ایک گھر پر چھاپے میں سیکیورٹی فورسز کے تین اہلکار جبکہ حملہ آوروں میں سے ایک شخص زخمی ہوا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

جنگ اور ہوائی سفر

پرواز کرنے کا معجزہ، جو انسانی ذہانت کا خوشگوار مظہر ہے، انسان کے انتقامی جذبات اور خون کی پیاس کی نذر ہوگیا ہے

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

بلاگ

ترغیب و خواہشات: رمضان کا نیا چہرہ؟

کسی مقامی رمضان ٹرانسمیشن کو لگائیں اور وہ سب کچھ جان لیں جو اب اس مقدس مہینے کے نئے چہرے کو جاننے کے لیے ضروری ہے

نائنٹیز کا پاکستان -- 1

ضیا سے مشرف کے بیچ گیارہ سال میں کبھی کرپشن کے بہانے تو کبھی وسیع تر قومی مفاد کے نام پر پانچ جمہوری حکومتیں تبدیل ہوئیں

ٹوٹے برتن

امّی کا خیال ہے کہ ایسے برتن پورے گاؤں میں کسی کے پاس نہیں۔ وہ تو ان برتنوں کو استعمال کرنے ہی نہیں دیتی

مجرم کون؟

کچھ چیزیں ڈنڈے کے زور پہ ہی چلتی ہیں، پھر آہستہ آہستہ عادت اور عادت سے فطرت بن جاتی ہیں۔