29 اگست, 2014 | 2 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

سیلاب سے 455 افراد ہلاک ہوئے، این ڈی ایم اے

گزشتہ دو سالوں کی ہی طرح اس سال بھی صوبہ سندہ سب سے زیادہ متاثر ہوا ۔ اے پی فوٹو

اسلام آباد: نیشنل ڈزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کے مطابق، گزشتہ پانچ ہفتوں سے ہونے والی مون سون بارشوں کے نتیجے میں کل چار سو پچپن افراد ہلاک ہوئے۔

پاکستان گزشتہ دو سالوں کے دوران سیلابوں کا شکار رہا ہے جس میں دو ہزار دس کا تباہ کن سیلاب بھی شامل ہے جس میں تقریباً اٹھارہ سو افراد ہلاک اور دو کڑوڑ دس لاکھ افراد متاثر ہوئے تھے۔

پچھلے دو سالوں کی ہی طرح اس سال بھی صوبہ سندہ سب سے زیادہ متاثر ہوا جہاں تیس لاکھ افراد سیلاب کے زیر اثر آئے۔

این ڈی ایم اے کے مطابق پنجاب میں متاثرین کی تعداد آٹھ لاکھ نوے ہزار رہی اور بلوچستان میں تقریباً دس لاکھ افراد متاثر ہوئے۔

ستمبر سے لیکر اب تک دو لاکھ ساٹھ ہزار افراد ریلیف کیمپوں میں پناہ لینے پر مجبور ہیں تاہم این ڈی ایم اے کے مطابق ڈھائی ہفتے قبل متاثرین کی تعداد دو لاکھ نوے ہزار تھی۔

این ڈی ایم اے کی طرف سے شائع کیے گئے ڈیٹا کے مطابق سیلاب کے باعث دس لاکھ سے زائد فصلیں بھی متاثر ہوئیں۔

اس حصے سے مزید

نواز شریف نے آرمی چیف سے 'معاونت' مانگی، آئی ایس پی آر

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق حکومت نےآرمی چیف سے موجودہ صورتحال کے حل کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کا کہا تھا۔

نواز شریف اب جھوٹ بولنے پر مستعفی ہوں، عمران خان

آئی ایس پی آر کے بیان کے بعد چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم ایک اور جھوٹ بولنے پر قوم سے معافی مانگیں۔

نواز شریف وزیر اعظم رہنے کا جواز کھو چکے ہیں، طاہر القادری

آئی ایس پی آرکے بیان پرردعمل میں سربراہ عوامی تحریک کاکہناہےکہ نوازشریف نے اخلاقی اور جمہوری قدروں کاجنازہ نکال دیا ہے


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

جمہوریت کے تسلسل کی ضرورت

حکومت نےکس قدر عجلت میں مذاکرات کا فیصلہ کیا، اس سے معاملات کے اوپر جی ایچ کیو کی گرفت کا اچھی طرح اندازہ ہوجاتا ہے۔

بلاگ

اجتماعی سیاسی قبر

فوج کو سیاسی معاملات میں شرکت کی دعوت دینا اس بات کا ثبوت ہے کہ سیاستدان سیاسی معاملات سے نمٹنے کی طاقت نہیں رکھتے۔

مووی ریویو: مردانی - پاورفل کہانی، بہترین پرفارمنس

بولی وڈ اداکار رانی مکھرجی اور طاہر بھاسن دونوں ہی اپنی بولڈ پرفارمنس کے لئے تعریف کے لائق ہیں۔

عظیم مقاصد، پر راستہ؟

اس طوفان کے نتیجے میں ان چاہی افرا تفری پھیل سکتی ہے، اسلیے اچھے مقاصد کے لیے ایسے راستے اختیار نہیں کیے جانے چاہییں۔

انقلاب معافی چاہتا ہے

ڈی چوک وہ سیاسی چراغ ہے جس کو اگر ضدی شہزادے کافی حد تک رگڑ دیں تو کچھ پتا نہیں اس میں سے انقلاب کا جن نکل ہی آئے۔