30 اگست, 2014 | 3 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

زمینی سائز کا نیا سیارہ دریافت

نئے سیارے کا تصوراتی خاکہ۔ —اے پی

لندن: یورپی ماہرین فلکیات نے زمین کے سائز کے برابر دوسرا سیارہ دریافت کرلیا ہے۔

اس بات کا اعلان بدھ کو جنیوا آبزرویٹری کے ماہرین فلکیات سٹیفن اودرے اور زیویر ڈومیسکی نے کیا۔

ماہرین کا کہنا ہے زمین کے قریبی مدار میں گردش کرنے والا یہ نیا سیارہ  ہمارے شمسی نظام سے باہر واقع ہے۔

دنیا سے 25 ٹریلین میل دور اس سیارے کی سطح کا درجہ حرارت ایک اندازے کے مطابق 2,192 فارن ہیٹ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

اس سے قبل کی گئی تحقیقات سے ثابت ہو چکا ہے کہ جب بھی سورج کے گرد گردش کرنے والا سیارہ دریافت کیا جاتا ہے تو عموماً اس نظام میں دیگر سیاروں کی موجودگی بھی یقینی ہے۔

سٹیفن اودرے نے نئے سیارے کو تاریخی دریافت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ہمارا قریبی پڑوسی ہے۔

اس حصے سے مزید

ٹوئٹر کا اینالیٹکس ڈیشن بورڈ متعارف

اس فیچر کے ذریعے صارفین کو دیکھنے کا موقع مل سکے گا کہ کتنے لوگوں نے ان کے ٹوئیٹس کو دیکھا۔

موٹاپے سے بچاﺅ کیلئے نو بہترین غذائیں

اگر آپ ڈائٹنگ کے بارے میں سوچ رہے ہیں تو ایسا مت کریں بلکہ بس اپنی خوراک ان زبردست غذاﺅں سے تبدیل کردیں

کسٹمر 32 پاکستانیوں کی جاسوسی میں ملوث؟

اسے سیکیورٹی اور مقامی سائبر اسپیس کو آپریٹ کرنے والے افراد کی پرائیویسی کے لیے سنگین خطرہ قرار دیا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ملکی مسائل سے غیر آہنگ حکومتی پالیسیاں

کیا یہ بات سمجھ آنے والی نہیں کہ میگا پروجیکٹس پر اٹھنے والے پیسے سے پہلے توانائی کے مسئلے کو حل کر لیا جائے؟

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

بلاگ

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

‫ڈرامہ ریویو: وہ۔۔۔ دوبارہ (خوف و دہشت کا احساس)

انسان چاہے بد روحوں سے جتنا بھی ڈرے مگر ان پر بنی فلموں یا ڈراموں کو دیکھنے کا شوق پھر بھی اس کا پیچھا نہیں چھوڑتا۔

تھری ڈی پرنٹنگ پر کچھ سوالات

کچھ کیسز ضرور ہوں گے جن میں تھری ڈی پرنٹنگ کو کاپی رائیٹ مواد کی غیر قانونی نقل تیار کرنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

پانی کی کمی اور پاکستان کا مستقبل

وزرات منصوبہ بندی کے مطابق پاکستان کی پانی ذخیرہ کی صلاحیت صرف نو فیصد ہے جبکہ دنیا بھر میں یہ شرح چالیس فیصد ہے۔