17 ستمبر, 2014 | 21 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

'اصغر خان کیس کا فیصلہ من و عن تسلیم کرتے ہیں'

shahbaz-sharif-670
وزیراعٰلی پنجاب شہباز شریف۔ —فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیر اعلٰی پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ اصغر خان کیس کے فیصلے کو من و عن تسلیم کرتے ہیں۔

ہفتے کے روز ضلع چکوال کی تحصیل کلر کہار  کیڈٹ کالج میں سالانہ اسپورٹس ڈے پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ صدر آصف علی زرادری نے بھی انٹیلیجنس بیورو (آئی بی) سے پچاس کروڑ روپے لیے تھے، ان کا بھی حساب ہونا چاہیے۔

 ان کا کہنا تھا کہ ملک کو توانائی بحران سمیت کئی چیلجنز کا سامنا ہے۔ ان کے مطابق پنجاب کا تعلیمی نظام عالمی معیار کا ہوگیا ہے۔

 اس موقع پر وزیر اعلٰی پنجاب نے لڑکیوں کے لیے دانش اسکول قائم کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ دسمبر میں مزید دو لاکھ لیپ ٹاپ تقسیم کیے جائیں گے۔

اس حصے سے مزید

پنجند ہیڈورکس پر پانی کی سطح میں اضافہ، متعدد گاؤں زیرِآب

پانی کی سطح میں اضافے کے بعد حکام نے آئندہ بارہ گھنٹے اہم قرار دیے ہیں۔

چنیوٹ کے گاؤں میں کوئی سرکاری مدد نہیں پہنچی

چناب کے کنارے اس گاؤں کی ایک خاتون کا کہنا ہے کہ غریبوں کو کچھ نہیں ملے گا، سارا امدادی سامان سینئر افسران ہڑپ کرلیں گے۔

دریائے چناب کی مختلف علاقوں کی جانب پیشقدمی جاری

پنجند ہیڈورکس میں میں پانی کے اخراج کی سطح بڑھ رہی تھی تاہم پیر کی رات نو بجے یہ چار لاکھ تیرہ ہزار کیوسک ریکارڈ کی گئی۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Talib Hussain
20 اکتوبر, 2012 17:48
Laptop distribution is good to obtain a good survey report. weldone shehbaz.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ڈیم، کینال، بیراج، اور ماحول

ہندوستانی پنجاب میں زیادہ بارشیں ہوئیں، جسکی وجہ سے اپ سٹریم کا پانی پاکستانی چناب اور جہلم میں بہہ آیا ہے

انتخابی اصلاحات: اگلا قدم

بحیثیت قوم ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا، کہ اس معاملے میں سچ سب کے سامنے آئے، اور کوئی شک شبہہ باقی نا رہے۔

بلاگ

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔