02 اکتوبر, 2014 | 6 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

نواز اور شہباز پر دس سال کی پابندی کا مطالبہ

پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف راجہ ریاض۔ فائل فوٹو

لاہور: پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر راجہ ریاض نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد الیکشن کمیشن فوری طور پر میاں نواز  شریف اور شہباز شریف کو دس سال کے لیے نااہل قرار دے۔

لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے راجہ ریاض نے کہا کہ آئینی طور پر عدالتی فیصلے کے بعد شہباز شریف نا اہل ہو چکے ہیں، انہوں نے چئیرمین نیب سے مطالبہ کیا کہ وہ آئی جے آئی کے سیاستدانوں سے تمام رقم واپس لیں۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن شہباز شریف کی رکنیت معطل کرے تا کہ وہ اصغر خان کیس کے فیصلے کے تحت ہونے والی تفتیش پر اثر انداز نہ ہوں جبکہ شریف برادران عوام سے ووٹ چرانے پر  قوم سے معافی مانگیں۔

راجہ ریاض کا کہنا تھا کہ جن جنرلز نے سیاستدانوں میں پیسے تقسیم کیے ان کے خلاف بھی کارروائی ہونا چاہیے، پیپلز پارٹی کو اب بھی عدلیہ سے تحفظات ہیں۔

اس حصے سے مزید

'وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کا نام ای سی ایل میں شامل کیا جائے'

لاہور ہائی کورٹ نے اس درخواست کو سماعت کے لیے منظور کرلیا ہے۔

اڈیالہ جیل کے زخمی کی حالت بدستور تشویش ناک

پولیس گارڈ کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے توہین مذہب کے مبینہ برطانوی ملزم کو مزید ہسپتال میں رکھنے کی درخواست۔

اسلامک اسٹیٹ اسلام کے خلاف ہے: پاکستان علماء کونسل

کونسل نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ تشدد کو فروغ دینے والی آئی ایس جیسی انتہاء پسند تنظیموں میں شمولیت اختیار نہ کریں۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Talib Hussain
20 اکتوبر, 2012 17:40
Showing impatiency by Raja Riaz is not good for himself. He ia making a statement which Imran Khan has to raise to CEC. He is making a statement which is already made by PM.Be wise and wait. Beating bush is not useful.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟