21 اگست, 2014 | 24 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

نوشہرہ میں دھماکہ، دو زخمی

تصویر میں بم دھماکے کے بعد تباہ شدہ موٹر سائیکل نظر آرہی ہے۔ فائل تصویر

نوشہرہ: ضلع نوشہرہ میں واقع جہانگیرہ صوابی روڈ پر پیر کے روز دھماکا ہوا ۔

دھماکے میں دو افراد زخمی ہوئے لیکن ابھی تک کسی بھی جانی نقصان کی اطلاح نہیں ہے۔

خبر کے مطابق بارودی مواد نجی بینک کے قریب موٹر سائیکل میں نصب تھا۔

زخمیوں کو فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ بم دھماکے کا نشان خیبرپختوانخوا کے وزیراعلٰی امیر حیدر خان ہوتی کا قافلہ تھا۔

وزیر اعلی خیبر پختونخوا امیر حیدر خان ہوتی کے قافلے کو صوابی جہانگیرہ روڈ پر اس وقت موٹر سائیکل میں نصب ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی جب وہ صوابی چوک میں سڑک کا افتتاح کرنے کے لئے جا رہے تھے، وزیر اعلی کا قافلہ دھماکے سے قبل وہاں سے گزر کر آگے نکل گیا جس کے باعث وہ محفوظ رہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق دھماکے میں2راہگیر زخمی ہوئے جبکہ دھماکے میں ایک کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا۔ دھماکے کے بعد پولیس نے متعدد مشکوک افراد کو بھی گرفتار کر لیا۔

وزیر اعلی امیر حیدر خان ہوتی نے دھماکے کے باوجود بھی سڑک کا افتتاح کیا اور جلسہ عام سے خطاب بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں سے اب بھی مذاکرات کے لئے تیارہیں تاہم اگر وہ مذاکرات پر آمادہ نہیں تو ہم بھی وطن کی بقا کا جنگ جاری رکھے گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی قربانیاں دی ہیں اور مزید قربانیوں کے لئے بھی تیار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم امن کے خواہاں ہیں اور امن کے پیرکار ہیں۔

اس حصے سے مزید

خیبرایجنسی: نیٹو ٹینکر پر فائرنگ، دو افراد ہلاک

فائرنگ کے بعد آئل ٹینکر میں آگ لگ گئی، جبکہ امدادی کارروائیاں شروع کردی گئیں ہیں۔

پشاور بڑی تباہی سے بچ گیا

دس کلو گرام وزنی بم کو چمکنی پولیس اسٹیشن کی حدود میں ایک پریشر ککر میں رکھا گیا تھا، جسے ناکارہ بنا دیا گیا۔

عمران خان پنجاب میں دھاندلی کی سزا کے پی کو نہ دیں: سراج الحق

جماعت اسلامی کے سربراہ کا کہنا ہے کہ آئین سے ماورا اقدام ملک میں جمہوریت کو نقصان پہنچائے گا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مضبوط ادارے

ریاستی اداروں پر تمام جماعتوں کی جانب سے حملہ تب کیا گیا جب وہ ابتدائی طور پر ہی سہی پر قابلیت کا مظاہرہ کرنے لگے تھے۔

آئینی نظام کو لاحق خطرات

پی ٹی آئی کی سیاست کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ یہ کسی طرح موجودہ آئینی صورت حال میں ممکن سیاسی حل کیلئے تیار نہیں ہے-

بلاگ

!جس کی لاٹھی اُس کا گلّو

ہر دکاندار اور ریڑھی والے سے پِٹنا کوئی آسان عمل نہیں ہوگا شاید یہی وجہ ہے کہ سول نافرمانی کوئی آسان کام نہیں۔

ہمارے کپتانوں کے ساتھ مسئلہ کیا ہے؟

اس بات کا پتہ لگانا مشکل ہے کہ مصباح الحق اور عمران خان میں سے زیادہ کون بچوں کی طرح اپنی غلطی ماننے سے انکاری ہے۔

پاک سری لنکا ٹیسٹ سیریز – ایک جائزہ

امید کی جانی چاہئے کہ پاکستانی ٹیم ٹیسٹ سیریز میں اپنی شکست کا بدلہ ون ڈے سیریز میں لینے کی پوری کوشش کرے گی۔

جارج اورویل کی جائے پیدائش کا دورہ

حکومت نے ان کی جائے پیدائش پرایک میوزیم کی تعمیر کا بھی اعلان کیا ہے، جس سے اس عظیم لکھاری کی یاد قائم رکھی جا سکے گی۔