25 جولائ, 2014 | 26 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

نوشہرہ میں دھماکہ، دو زخمی

تصویر میں بم دھماکے کے بعد تباہ شدہ موٹر سائیکل نظر آرہی ہے۔ فائل تصویر

نوشہرہ: ضلع نوشہرہ میں واقع جہانگیرہ صوابی روڈ پر پیر کے روز دھماکا ہوا ۔

دھماکے میں دو افراد زخمی ہوئے لیکن ابھی تک کسی بھی جانی نقصان کی اطلاح نہیں ہے۔

خبر کے مطابق بارودی مواد نجی بینک کے قریب موٹر سائیکل میں نصب تھا۔

زخمیوں کو فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ بم دھماکے کا نشان خیبرپختوانخوا کے وزیراعلٰی امیر حیدر خان ہوتی کا قافلہ تھا۔

وزیر اعلی خیبر پختونخوا امیر حیدر خان ہوتی کے قافلے کو صوابی جہانگیرہ روڈ پر اس وقت موٹر سائیکل میں نصب ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی جب وہ صوابی چوک میں سڑک کا افتتاح کرنے کے لئے جا رہے تھے، وزیر اعلی کا قافلہ دھماکے سے قبل وہاں سے گزر کر آگے نکل گیا جس کے باعث وہ محفوظ رہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق دھماکے میں2راہگیر زخمی ہوئے جبکہ دھماکے میں ایک کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا۔ دھماکے کے بعد پولیس نے متعدد مشکوک افراد کو بھی گرفتار کر لیا۔

وزیر اعلی امیر حیدر خان ہوتی نے دھماکے کے باوجود بھی سڑک کا افتتاح کیا اور جلسہ عام سے خطاب بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں سے اب بھی مذاکرات کے لئے تیارہیں تاہم اگر وہ مذاکرات پر آمادہ نہیں تو ہم بھی وطن کی بقا کا جنگ جاری رکھے گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی قربانیاں دی ہیں اور مزید قربانیوں کے لئے بھی تیار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم امن کے خواہاں ہیں اور امن کے پیرکار ہیں۔

اس حصے سے مزید

پشاور میں فائرنگ، سابق رکن قومی اسمبلی کا پرسنل سیکرٹری ہلاک

مقتول بسم اللہ کو نامعلوم افراد نے رنگ روڈ تاج آباد کے علاقے میں گولیوں کا نشانہ بنایا، پولیس۔

سراج الحق وزیر خزانہ خیبر پختونخوا کے عہدے سے مستعفی

جماعت اسلامی امیر سراج الحق نے وزیر خزانہ خیبر پختونخوا کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

ایف ڈی ایم اے کو بے گھر افراد کے لیے ڈھائی ارب روپے درکار

وفاقی حکومت پہلے ہی فاٹا ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کو نقل مکانی کرنے والے افراد کی امداد کے لیے دو ارب روپے جاری کرچکی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-