22 ستمبر, 2014 | 26 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

نوشہرہ میں دھماکہ، دو زخمی

تصویر میں بم دھماکے کے بعد تباہ شدہ موٹر سائیکل نظر آرہی ہے۔ فائل تصویر

نوشہرہ: ضلع نوشہرہ میں واقع جہانگیرہ صوابی روڈ پر پیر کے روز دھماکا ہوا ۔

دھماکے میں دو افراد زخمی ہوئے لیکن ابھی تک کسی بھی جانی نقصان کی اطلاح نہیں ہے۔

خبر کے مطابق بارودی مواد نجی بینک کے قریب موٹر سائیکل میں نصب تھا۔

زخمیوں کو فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ بم دھماکے کا نشان خیبرپختوانخوا کے وزیراعلٰی امیر حیدر خان ہوتی کا قافلہ تھا۔

وزیر اعلی خیبر پختونخوا امیر حیدر خان ہوتی کے قافلے کو صوابی جہانگیرہ روڈ پر اس وقت موٹر سائیکل میں نصب ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی جب وہ صوابی چوک میں سڑک کا افتتاح کرنے کے لئے جا رہے تھے، وزیر اعلی کا قافلہ دھماکے سے قبل وہاں سے گزر کر آگے نکل گیا جس کے باعث وہ محفوظ رہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق دھماکے میں2راہگیر زخمی ہوئے جبکہ دھماکے میں ایک کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا۔ دھماکے کے بعد پولیس نے متعدد مشکوک افراد کو بھی گرفتار کر لیا۔

وزیر اعلی امیر حیدر خان ہوتی نے دھماکے کے باوجود بھی سڑک کا افتتاح کیا اور جلسہ عام سے خطاب بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں سے اب بھی مذاکرات کے لئے تیارہیں تاہم اگر وہ مذاکرات پر آمادہ نہیں تو ہم بھی وطن کی بقا کا جنگ جاری رکھے گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی قربانیاں دی ہیں اور مزید قربانیوں کے لئے بھی تیار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم امن کے خواہاں ہیں اور امن کے پیرکار ہیں۔

اس حصے سے مزید

پشاور چرچ حملوں کی یاد میں

مسیحی برادری نے آل سینٹ چرچ میں بائیس ستمبر، 2013 کو دو بم دھماکوں میں ہلاک ہونے والوں کیلئے خصوصی عبادات کیں۔

پشاور: سخت سیکیورٹی میں انسدادِ پولیو مہم جاری

حکام کے مطابق پشاور کی 96 یونین کونسلوں میں آج سات لاکھ 54 ہزار بچوں کو پولیو سے بچائو کے قطرے پلائے جا رہے ہیں۔

ہنگو: نامعلوم افراد کی فائرنگ، جے یو آئی ف کے رہنما ہلاک

مقامی رہنما شیر عالم پر اس وقت حملہ کیا گیا جب وہ گاڑی میں سفر کررہے تھے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کی "مڈل کلاس" بغاوت

پاکستان کے مڈل کلاس لوگ ہی جمہوریت کے سب سے بڑے مخالف ہیں اور کچھ کیسز میں تو جمہوریت کی مخالفت بغاوت کی حد تک شدید ہے۔

!میرے پیارے اسلام آباد

میں آپ سے معافی چاہتا ہوں کہ میں نے آپ کی جانب دو دھرنے بھیجے ہیں، جنہوں نے آپ کا امن و سکون تباہ کر دیا ہے۔

بلاگ

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-